متعدد جان لیوا امراض کا خطرہ کم کرنے والی یہ عادت آج ہی اپنالیں

نیند کی کمی جان لیوا امراض بشمول فالج، امراض قلب اور کینسر کا خطرہ بڑھانے کا باعث بنتی ہے، تاہم اس سے بچنے کا طریقہ بہت آسان ہے۔

ایک طریقہ تو مناسب نیند ہے تاہم ایسا ممکن نہیں تو ہفتہ بھر میں ڈھائی گھنٹے کی تیز چہل قدمی یا دن بھر میں 21 منٹ تک ایسا کرنا بھی مختلف امراض سے موت کا خطرہ کم کرسکتا ہے۔

یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

برطانیہ کی لندن کالج یونیورسٹی اور آسٹریلیا کی سڈنی یونیورسٹی کی اس تحقیق میں بتایا گیا کہ جو لوگ مناسب وقت تک سونے سے محروم رہتے ہیں، وہ جسمانی سرگرمیوں سے کسی حد تک جان لیوا امراض کا خطرہ کم کرسکتے ہیں۔

اس تحقیق میں 3 لاکھ 80 ہزار سے زیادہ افراد کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا گیا جن کی اوسط عمر 56 سال تھی۔

ان افراد نے اپنی جسمانی سرگرمیوں اور نیند کے بارے میں اسکور دیئے تھے۔

11 سال تک ان افراد کا جائزہ لیا گیا جس دوران 15 ہزار سے زائد افراد چل بسے جن میں سے 4 ہزار سے زیادہ دل کی شریانوں سے جڑے امراض اور 9 ہزار سے زیادہ کینسر سے ہلاک ہوئے۔

نیند کو نتائج سے الگ کرنے پر دریافت کیا گیا کہ ورزش نہ کرنے والے افراد میں قبل از وقت موت کا امکان 25 فیصد زیادہ ہوتا ہے، تاہم ہفتہ بھر میں ڈھائی ہفتے کی تیز چہل قدمی سے اس خطرے میں 8 فیصد تک کمی لائی جاسکتی ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ نیند کی کمی اور قبل از وقت موت کا خطرہ کافی حد تک اس صورت میں ختم کیا جاسکتا ہے ایک ہفتے میں ڈیڑھ سو منٹ تک چہل قدمی کا ہدف حاصل کرلیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے نتائج سے اس خیال کو تقویت ملتی ہے کہ جسمانی سرگرمیوں اور نیند کے ذریعے صحت کو بہتر بنایا جاسکتا ہے۔

Close