کرکٹر رزاق اور ڈانسر دیدار کی شادی کیوں نہ ہو پائی؟

سابق قومی کرکٹر اور مایہ ناز آل رائونڈر عبدالرزاق نے تقریبا 22 سال بعد اعتراف کیا ہے کہ ماضی میں ان کے اداکارہ و ڈانسر دیدار سے رومانوی تعلقات رہے لیکن انکی شادی اس لیے نہ ہو پائی کہ دیدار نے شوبز کی دنیا چھوڑنے سے انکار کر دیا تھا۔
یاد رہے کہ عبدالرزاق نے 2013 میں کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لی تھی، انہوں نے 260 سے زائد ایک روزہ جب کہ 40 سے زائد ٹیسٹ میچ کھیلے تھے۔ رزاق کا شمار اچھے بلے بازوں میں ہوتا تھا، اور انہیں بہترین بالر بھی سمجھا جاتا تھا اور ان کا کیریئر تنازعات سے بھی بچا رہا۔ لیکن 1999 میں جب ان کا کیریئر عروج پر تھا تو یہ خبریں آئیں کہ انکے تعلقات معرعف اسٹیج ڈانسر اور اداکارہ دیدار سے ہیں، تاہم اس وقت ایسی خبروں کی تصدیق نہیں ہو سکی تھی۔ لیکن اب سابق کرکٹر نے مذکورہ معاملے پر کھل کر بات کی ہے۔ عبدالرزاق نے ایک انٹرویو کے دوران نہ صرف ڈانسر دیدار سے ٓتعلقات کے معاملے پر کھل کر بات کی بلکہ انہوں نے دنیائے کرکٹ کے کئی رازوں سے بھی پردہ اٹھایا۔
پروگرام میں عبدالرزاق نے ماضی میں ڈانسر و اداکارہ دیدار سے تعلقات کے سوال پر اعتراف کیا کہ ان کے اداکارہ سے تعلقات رہے ہیں۔ سابق کرکٹر نے بتایا کہ ان کے اور ڈانسر کے درمیان 1999 میں تعلقات استوار ہوئے اور بات شادی تک جا پہنچی۔ انہوں نے اداکارہ سے شادی کے لیے شوبز چھوڑنے کا مطالبہ کیا تھا۔ رزاق کے مطابق انہوں نے دیدار کو شادی کرنے کے لیے شوبز چھوڑنے کے فیصلے کے لیے 6 ماہ کا وقت دیا تھا مگر بعد میں اداکارہ نے انہیں بتایا کہ وہ اپنا کیریئر نہیں چھوڑ سکتیں، جس بنا پر انہوں نے ان سے شادی نہیں کی۔سابق کرکٹر کے مطابق چوں کہ ان کا خاندان کسی شوبز شخصیت کو قبول نہیں کرتا، اس لیے انہوں نے دیدار سے شادی نہیں کی۔
رزاق نے بتایا کہ ان میں جس طرح کی صلاحیت تھی، اس طرح سے انہیں استعمال نہیں کیا گیا اور متعدد مرتبہ کرکٹ بورڈ کی اعلیٰ انتظامیہ کے فیصلوں کی وجہ سے انہیں ٹیم سے باہر نکالا گیا۔سابق کرکٹر نے یہ انکشاف بھی کیا کہ انہیں ماضی میں میچ فکسنگ کی بھی پیش کش کی گئی اور انہوں نے پیش کش کو مسترد کرتے ہوئے فکسرز کو بتایا کہ وہ انہیں بہت ہی زیادہ پیسے دیں تو وہ پھر ہی وہ اپنا ایمان خراب کریں گے۔
عبدالرزاق نے بتایا کہ انہوں نے تقریبا ایک درجن کپتانوں کی سربراہی میں کرکٹ کھیلی اور جب یونس خان کو کپتانی کی پیش کش کی گئی تو انہیں یہ بھی احکامات دیے گئے کہ عبدالرزاق سمیت 7 کھلاڑیوں کو ٹیم سے باہر کریں مگر یونس خان نے پیش کش مسترد کردی۔سابق کرکٹر کے مطابق یہی پیش کش بعد ازاں شعیب ملک کو کی گئی اور وہ اعلیٰ حکام کے آگے مجبور تھے، انہوں نے مجبوری کے تحت ان سمیت 5 کھلاڑیوں کو ٹیم سے باہر کیا۔عبدالرزاق نے بتایا کہ وہ ٹیم سے نکالے جانے کے معاملے پر شعیب ملک کو قصور وار نہیں سمجھتے۔ایک سوال کے جواب میں عبدالرزاق نے بتایا کہ ان کا کتاب لکھنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، کیوں کہ کتاب میں سچی باتیں لکھنی پڑتی ہیں، اس لیے وہ ایسا قدم اٹھانے سے گریز کر رہے ہیں۔

Close