ڈاکٹر فاروق ستار کی قاف لیگ میں شمولیت کی کوشش





سیاسی یتیمی کا شکار ایم کیو ایم کے سابق رہنما اور تنظیم ایم کیو ایم بحالی کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کی قاف لیگ میں شمولیت کی کوشش ابتدائی مراحل میں ہی بدمزگی کا شکار ہوگئی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فاروق ستار نے اسٹیبلشمنٹ نواز قاف لیگ میں شمولیت کے لئے گجرات کے چوہدری برادران سے رابطہ کیا تھا۔تاہم انہیں کہا گیا کہ وہ پہلے کراچی میں ق لیگ رہنما طارق حسن سے ملاقات کر لیں۔ فاروق ستار شمولیت کے حوالے سے کوئی نتیجہ نکلنے سے پہلے اپنی ملاقات کو خفیہ رکھنا چاہتے تھے۔ چنانچہ جب وہ مسلم لیگ ق کراچی کے مقامی رہنما طارق حسن سے خفیہ ملاقات کے لیے ان کی ڈی ایچ اے کراچی میں واقع رہائش گاہ پہنچے تو وہاں صحافیوں اور کیمروں کو دیکھ کر غصے میں آ گئے اور ناراض ہو کر واپس چلے گے۔
فاروق ستار نے میڈیا کو دیکھ کر اپنے میزبان طارق حسن سے کہا کہ جب طے ہو گیا تھا کہ ملاقات خفیہ ہوگی اور اسکی میڈیا کوریج نہیں ہوگی تو آپ نے میڈیا کو کیوں بلایا۔ اس پر طارق حسن نے کہا کہ میڈیا کو ق لیگ کی جانب سے مدعو نہیں کیا گیا۔ تاہم حقیقت یہ تھی کہ ق لیگ سندھ کے سیکریٹری اطلاعات محمد صادق شیخ نے واٹس ایپ میسجز کے ذریعے شہر بھر کے میڈیا کو نہ صرف مدعو کیا تھا بلکہ دونوں رہنماووں کے میڈیا سے بات چیت کرنے کی اطلاع بھی دی تھی۔ مسلم لیگ ق کے دیگر رہنماووں نے بھی بپھرے ہوئے فاروق ستار کو منانے کی کوشش کی مگر فاروق ستار شدید غصے کے عالم میں اپنی نئی نویلی 2021 ماڈل کی ہنڈا سوک بی ایف یو 563 میں بیٹھ کر طارق حسن کے گھر کی دہلیز سے واپس لوٹ گئے۔ ایسا کرتے ہوئے فاروق ستار کے چہرے پر شدید مایوسی، تلملاہٹ اور غصے کی کیفیت چھائی ہوئی تھی۔ ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم سے نکالے جانے کے بعد سے فاروق ستار اپنے لیے کسی سیاسی چھتری کی تلاش میں دربدر ہو رہے ہیں۔ انہوں نے مصطفی کمال کی پی ایس پی میں جانے کی کوشش کی تو بے اعتباری کی وجہ سے پی ایس پی نے انہیں ساتھ لے کر چلنے سے صاف انکار کردیا۔ فاروق ستار نے پی ٹی آئی میں بھی شامل ہونے کی کوشش کی تھی مگر وہاں بھی انہیں لال جھنڈی دکھا دی گئی۔ ذرائع کامکہنا ہے کہ فاروق ستار حکومتی ایوانوں میں جانے کے لیے کوئی بھی قدم اٹھانے کو تیار ہیں۔ اس سلسلے میں انہوں نے گجرات کے چوہدریوں سے ملاقات کرکے ق لیگ کا حصہ بننے کی درخواست کی تھی جس پر چوہدریوں نے خود تو ملاقات نہیں کی تاہم انہیں ق لیگ کراچی کے مقامی رہنما طارق حسن کے گھر جاکر ان سے ملنے کی ہدایت کی۔ ذرائع کے مطابق فاروق ستار اس ملاقات کو خفیہ رکھنا چاہتے تھے تاہم ق لیگ نے پورے شہر کے میڈیا کو بلا کر فاروق ستار کی خفیہ ملاقات کا بھانڈا پھوڑ دیا۔ فاروق ستار کے قریبی ذرائع کے مطابق ذیادہ تر سیاسی جماعتیں فاروق ستار کو نا قابل بھروسہ اور ناقابل اعتماد شخصیت تصور کرتی ہیں جو ذاتی مفاد کے لیے کسی بھی طرف قلابازی لگاسکتے ہیں۔ تاہم فاروق ستار کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ طارق حسن نے خود ان سے ملاقات کے لیے رابطہ کیا اور پھر میڈیا کو بھی بلا لیا حالانکہ انہوں نے ایسا کرنے سے منع کیا تھا۔

Back to top button