منشیات کیس : شاہ رخ خان کے ڈرائیور سے چھ گھنٹے تفتیش

بالی ووڈ کنگ کے بیٹے آریان خان کے کیس میں انسداد منشیات فورس نے شاہ رخ خان کے ڈرائیور سے چھ گھنٹے تک تفتیش کی ، شاہ رخ کے ڈرائیور کو تفتیش کیلئے نارکوٹکس فورس کے سامنے پیش ہونے کا سمن جاری کیا گیا تھا۔انسداد منشیات فورس نے ڈرائیور سے تفتیش کے بعد کارروائی کرتے ہوئے مزید افراد کو بھی حراست میں‌ لیا۔

بالی ووڈ کنگ کے ڈرائیور کا بیان نارکوٹکس کے دفتر میں ریکارڈ کیا گیا، تاہم تاحال بیان کی تفصیلات سامنے نہیں آ سکی ہیں۔شاہ رخ خان کے ڈرائیور کو انسداد منشیات فورس نے 9 اکتوبر کو سمن جاری کرتے ہوئے 10 اکتوبر کو طلب کیا تھا جس پر انہوں نے نارکوٹکس کے دفتر پہنچ کر بیان قلم بند کروایا۔

دوسری جانب آریان خان کی ضمانت کے لیے ممبئی کی سیشن کورٹ میں درخواست بھی دائر کردی گئی جس پر 13 اکتوبر کو سماعت ہونے کا امکان ہے۔آریاں خان کی درخواست پر 11 اکتوبر کو سماعت ہونی تھی مگر عدالت نے اس دن سماعت نہیں کی، اس سے قبل میٹروپولیٹن عدالت نے 7 اکتوبر کو ان کی ضمانت درخواست مسترد کردی تھی۔

آریان خان کو میٹرو پولیٹن عدالت نے 7 اکتوبر کو 14 دن کے عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیجا تھا، جس کے بعد 8 اکتوبر کو انہیں آرتھر جیل منتقل کیا گیا تھا۔آریان خان کو نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے دوستوں ارباز مرچنٹ، منمن دھمیچا، نوپور سریکا، اسمیت سنگھ، موہک جسوال، وکرانت چوکر اور گومت چوپڑا سمیت منشیات استعمال کرنے کے الزام میں 3 اکتوبر کروز پارٹی سے گرفتار کیا تھا۔

Back to top button