ففٹی ففٹی والے کامیڈین ماجد جہانگیر مسیحا کے منتظر


پی ٹی وی کے مزاحیہ پروگرام ففٹی ففٹی سے شہرت کی بلندیوں کو چھونے والے کامیڈین ماجد جہانگیر زندگی کی جمع پونجی علاج پر لٹانے کے بعد اب کسمپرسی کا شکار ہیں اور مدد کے لیے کسی مسیحا کے منتظر ہیں۔

لیکن ہماری شوبز انڈسٹری میں کسی فنکار کے ایسے حالات کوئی نئی بات نہیں۔ اس سے قبل بھی کئی نامور شوبز ستاروں کو زندگی کی تلخیوں کا تنہا سامنے کرتے دیکھا گیا ہے۔ یہ سلسلہ اکثر تب تک جاری رہتا ہے جب تک زندگی ان بے کس اور۔مجبور فنکاروں کا ساتھ نہیں چھوڑ جاتی۔

ایسے مجبور فنکاروں میں ایک نام ماجد جہانگیر کا بھی ہے جنہیں ماضی میں حسن کارکردگی کے ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔ ففٹی ففٹی سے نام بنانے والے ماجد نے یقیناً کچھ تو کیا ہو گا کہ انہیں بڑے بڑے ایوارڈز دیئے گئے لیکن انکا کہنا ہے کہ ان سے سب ایوارڈز واپس لے کر ان کے بدلے دو وقت کی روٹی کا بندوبست کر دیا جائے۔ ماجد کے بقول ایسے ایوارڈ کا کیا فائدہ جو ایک آرٹسٹ کو سکون اور صحت کی زندگی دینے سے بھی قاصر ہو۔ ماجد جہانگیر نے بتایا کہ وہ کچھ عرصہ پہلے فالج کے بعد کام معذور ہو گے تھے۔ اب وہ اپنی جمع پونجی علاج پر لٹانے کے بعد مدد مانگنے پر مجبور ہیں۔

کچھ عرصہ پہلے جب ماجد جہانگیر نے بیماری کے ہاتھوں فاقہ کشی سے تنگ آ کر سڑک پر کھڑے ہوکر لوگوں کے آگے ہاتھ پھیلا دیے تو پیپلزپارٹی کی شرمیلا فاروقی نے انہیں سندھ حکومت سے چار لاکھ روپے دلوائے تھے لیکن وہ لوگوں کا کر لٹانے میں ختم ہوگئے۔

چناچہ انہوں نے اپنی بیگم کے ساتھ لاہور جا کر سڑکوں پر امداد اکٹھی کرنے کا فیصلہ کیا۔ بحریہ ٹاؤن کے ملک ریاض نے یہ سب دیکھ کر وعدہ کیا کہ وہ انہیں گھر بھی دیں گے اور علاج کی سہولیات بھی، لیکن ایسا نہ ہو پایا۔ اس دوران ماجد کی زندگی کا واحد سہارا ان کی بیگم بھی چل بسیں اور انکی زندگی مشکل تر ہو گئی۔ ایسی حالت میں وہ بے بسی کی تصویر بن چکے ہیں۔ اب وہ پھر سے سڑک پر ہیں اور اپنی مدد کے لئے آواز بلند کر رہے ہیں، اب دیکھنا یہ ہے کہ حکومت ان کی مدد کے لیے کب آگے بڑھتی ہے؟

Related Articles

Back to top button