بھارتی عزت کا جنازہ نکالنے والے ابھی نندن کو ہیرو کیوں بنایا گیا؟


سال 2019 میں پاک فضائیہ کے ہاتھوں اپنا جہاز گرائے جانے کے بعد پیراشوٹ سے کود کر جان بچانے اور قیدی بن جانے والے بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو بھارت کا اعلیٰ ترین فوجی اعزاز دئیے جانے پر حیرت کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ابھی نندن کو ایوارڈ دینے پر بھارتی ناقدین سوال کر رہے ہیں کہ کیا اسے ملک کی عزت کا جنازہ نکالنے پر نوازا گیا ہے؟
یاد رہے کہ پاکستان مخالف مشن میں ناکامی کے باوجود مودی سرکار نے اپنی خفت مٹانے کے لیے پائلٹ ابھی نندن کو ایک بڑے فوجی اعزاز ’’ویر چکرا‘‘ سے نواز دیا ہے جس پر بھارتی حکومت کو سوشل میڈیا صارفین طنز و مزاح کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ پاکستانی حدود میں فضائیہ کے ہاتھوں نشانہ بننے اور پھر زمین پر اترنے کے بعد عوام کے تشدد کا نشانہ بننے والے ابھی نندن کو ونگ کمانڈر کے عہدے سے ترقی دے کر گروپ کیپٹن بھی بنا دیا گیا ہے۔
مودی سرکار نے اپنے بھگوڑے پائلٹ کو فوجی اعزاز سے نوازنے کا یہ بہانہ گھڑا ہے کہ ابھی نندن نے ایک پاکستانی ایف 16 طیارے کو تباہ کیا تھا۔ لیکن اس بھارتی دعوے کی نہ صرف پاکستان بلکہ عالمی مبصرین نے بھی تردید کی تھی کیونکہ پاکستانی ایف 16 طیاروں کی تعداد پوری تھی اور اس میں سے کوئی بھی جہاز غائب نہیں تھا۔ بھاتی اخبار ’دی انڈین ایکسپریس‘ کے مطابق نئی دہلی میں انعامات سے متعلق تقریب میں ابھی نندن نے بھارتی صدر رام ناتھ کووند سے میڈل وصول کیا، تقریب میں وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ بھی شریک تھے۔ ویر چکرا بھارتی فوج کا تیسرا اعلیٰ سطح کا اعزاز ہے جبکہ پہلے نمبر پر پرم ویر چکرا اور دوسرے نمبر پر ماہا چکرا ایورڈز ہیں۔
’’انڈین ایکسپریس‘‘نے ایوارڈ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا کہ ونگ کمانڈر ابھی نندن بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی حفاظت کو خاطر میں لائے بغیر دشمن کے سامنے جرأت سے کھڑے رہے اور غیر معمولی انداز میں اپنی ذمہ داریاں نبھائیں۔’ تاہم بھارتی سوشل میڈیا پر ابھی نندن کو نوازنے کا مذاق اڑایا جا رہا ہے اور سوال کیا جا رہا ہے کہ کیا اسے ملک کی عزت عزت سے نوازا گیا ہے اور کیا اس کی وجہ صرف یہ ہے کہ وہ ایک سابق انڈین ایئرفورس آفیسر کا بیٹا ہے۔
ابھی نندن کو ایوراڈ دیئے جانے پر پیپلز پارٹی کی نائب صدر شیری رحمٰن نے ٹوئٹ کیا کہ کیا یہ حقیقت ہے؟ پاکستانی حراست میں چائے پینا ؟یہ حقیقت کے برعکس ہے۔ وزیر اعظم کے فوکل پرسن برائے ڈیجیٹل میڈیا ارسلان خالد نے لکھا ’فنٹاسٹک‘، میں ابھی نندن کے جذبات سمجھ سکتا ہوں۔ ابھینندن کو ’ویر چکرا‘ ایوارڈ دینے پر پاکستانی سوشل میڈیا صارفین بھی انڈین حکومت کو طنز و مزاح کا نشانہ بنا رہے ہیں۔حسین ندیم نامی صارف نے اس حوالے طنزاً لکھا کہ میں بہادر ابھینندن کو ایف 16 گرانے اور پھر اپنی جیت کا جشن منانے کے لیے اپنے جہاز سے ایجیکٹ ہوکر پاکستان اتر کر چائے پینے پر مبارکبا دیتا ہوں۔ ٹوئٹر پر کرن نامی صارف نے لکھا کہ ’تو کیا ابھینندن کو پاکستان میں مشن کے فیل ہونے پر ایوارڈ دیا جا رہا۔ بھارتیوں کو زیرو کو ہیرو بنانا خوب آتا ہے۔
آئی ایم ایف سے معاہدہ: پاکستان کی خود مختاری کا سودا
یاد رہے انڈیا نے 26 فروری 2019 کو پاکستان کے علاقے بالاکوٹ میں جیش محمد کے ایک ٹھکانے کو نشانہ بنانے کا دعویٰ کیا تھا۔ پاکستان نے جوابی فضائیہ کارروائی کرتے ہوئے ابھینندن کا طیارہ اپنی سرحدی حدود میں مار گرایا تھا۔ حادثے کا شکار ہونے کے بعد ابھینندن طیارے سے پیرا شوٹ کے ذریعے نکلنے میں کامیاب رہا جسے پاکستانی عوام نے پکڑ کر فوج کے حوالے کیا تھا۔ تاہم عمران خان نے ابھی نندن کو خطے میں قیام امن کے جذبے کے تحت یکم مارچ 2019 کو رہا کردیا تھا۔

Related Articles

Back to top button