پاکستانی ڈرامے سینما میں دکھانے کا نیا ٹرینڈ شروع

عوام میں مقبولیت حاصل کرنے والے پاکستانی ڈراموں کو سینما پر دکھانے کا نیا ٹرینڈ زور پکڑنے لگا ہے، ’’عہد وفا‘‘، ’’میرے پاس تم ہو‘‘، ’’سنگ ماہ‘‘ کے بعد ڈرامہ ’’پری زاد‘‘ کی آخری قسط کو بھی سینماؤں کی زینت بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پاکستان میں گزشتہ دو سال سے ڈراموں کو سینماؤں میں دکھانے کا رجحان پروان چڑھ رہا ہے اور دو سال کے دوران ’’میرے پاس تم ہو‘‘، ’’عہد وفا‘‘ اور ’’سنگ ماہ‘‘ جیسے ڈرامے سینماؤں میں دکھائے جا چکے ہیں۔ ڈرامہ سیریل ’’سنگ ماہ‘‘ کو تین دن قبل ہی 7 اور 8 جنوری کو پیش کیا گیا تھا اور اس کی پہلی قسط کو بڑے پردے پر پیش کیا گیا تھا، اس سے قبل 2020 کے آغاز میں مقبول ترین ڈرامے ’’میرے پاس تم ہو‘‘ اور ’’عہد وفا‘‘ کی آخری قسطوں کو سینماؤں میں پیش کیا گیا تھا اور اب ہم ٹی وی نے مشہور ڈرامے ’’پری زاد‘‘ کی آخری قسط بھی بڑے پردے پر دکھانے کا اعلان کر دیا ہے۔

معروف چینل ’’ہم ٹی وی‘‘کی جانب سے ڈرامہ ’’پری زاد‘‘ کا پوسٹر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر شیئر کرتے ہوئے تصدیق کی کہ 2021 کے مقبول ترین ڈرامے کی آخری قسط کو 22 جنوری کو بڑے پردے پر پیش کیا جائے گا، نجی ٹی وی کے مطابق سینماؤں میں آخری قسط کو ٹی وی سے قبل نشر کیا جائے گا۔ ’پری زاد‘ کو 22 جنوری کو ملک بھر کے سینماؤں میں ریلیز کیا جائے گا اور ممکنہ طور پر ڈرامے کی آخری قسط کو چند دن تک بڑے پردے پر دکھایا جائے گا، ایک طرف جہاں پاکستانی سینماؤں میں ڈرامے دکھانے کا رواج چل پڑا ہے، وہیں بڑے پردے پر گزشتہ دو سال سے انتہائی کم پاکستانی فلمیں ریلیز کی گئی ہیں۔

کوک سٹوڈیو سیزن 14 کا گانے ’’تو جھوم‘‘ سے شاندار آغاز

مارچ 2020 میں کرونا کی وجہ سے سینماؤں کی بندش کے بعد نومبر 2021 میں 18 ماہ بعد پہلی پاکستانی فلم ’’کھیل کھیل میں‘‘ میں بڑے پردے پر ریلیز کی گئی تھی، جس نے درمیانے درجے کی کمائی کی اگرچہ پاکستان میں گزشتہ چار ماہ سے سینما کھلے ہوئے ہیں، تاہم تاحال بڑے بجٹ کی کوئی دوسری پاکستانی فلم ریلیز نہیں کی گئی اور چند فلموں کی نمائش کا اعلان کر کے ان کی ریلیز موخر کر دی گئی۔

اب پاکستان میں کرونا کی پانچویں لہر کا آغاز ہو چکا ہے اور یومیہ کرونا کیسز میں بھی 10 دن سے مسلسل اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے، جس وجہ سے خیال کیا جا رہا ہے کہ ممکنہ طور پر سینما پھر سے بند کر دیئے جائیں گے تاہم تاحال حکومت نے لاک ڈاؤن لگانے یا سینماؤں کو بند کرنے کا عندیہ نہیں دیا۔

Related Articles

Back to top button