مستقل آئی لائنر بنواتے ہوئے چہرہ خراب ہوگیا

شاید ہی کوئی خاتون ہو جسے میک اپ کا شوق نہ ہو، اکثر خواتین میک اپ پر خوب وقت اور رقم صرف کرتی ہیں تاکہ جاذب نظر دکھائی دیں، یہی وجہ ہے کہ موجودہ دور میں خواتین میں میک اَپ کا رجحان بڑھتا جارہا ہے اور اس سلسلے میں مختلف بیوٹی سیلون خواتین کے چہروں پر نِت نئی تکنیک کا استعمال کرتے ہوئے انہیں خوبصورت بنانے کےلیے بے شمار ٹریٹمنٹ کرتے ہیں لیکن کبھی کبھی خوبصورت بنانے کی یہ ترکیبیں نقصان بھی پہنچادیتی ہیں۔
37سالہ ہینا ہوپکنس ایک میک اپ آرٹسٹ کے پاس ’مستقل آئی لائنر‘بنوانے کے غرض سے سیلون گئی تھیں جس نے ان کی آنکھوں کے پپوٹے اور چہرے کو بگاڑ دیا۔
آکسفورڈ کی اس کاروباری خاتون نے دعویٰ کیا ہے کہ میک اپ آرٹسٹ نے تکلیف کی وجہ سے چیخوں کے باوجود اس عمل کو نہیں روکا۔
ہینا دائیں آنکھ سے نابینا ہیں، ان کا کہنا ہے کہ انہیں میک اپ آرٹسٹ نے چُپ ہونے کےلیے کہا اور ان کے چیخنے چلانے کو بچگانہ حرکت قرار دےدیا۔
یہ میک اپ آرٹسٹ وسطی لندن کے شہر میریلیبون میں اَپ مارکیٹ نامی سیلون چلا رہی ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ اس عمل کے بعد ان کا چہرہ کالا اور نیلے رنگ کا ہوگیا اور وہ کسی خطرناک فلم میں کردار کرنے والی کی طرح دکھائی دے رہی تھیں۔
ہینا اپنے ذاتی معالج کے پاس گئیں جہاں ڈاکٹر نے ان کے علاج کےلیے تقریباً ساڑھے 8 ہزار ڈالر کی خطیر رقم لگنے کا بتایا۔
ہینا ایک بین الاقوامی سوفٹ ویئر کمپنی میں تربیت اور عملے کی ترقی کی نگرانی کرتی ہیں، ان کا کہنا تھا کہ کام اور کاروبار کی وجہ سے صبح کے وقت تیار ی کے وقت کی بچت کےلیے انہوں نے مستقل آئی لائنر کرانے کا فیصلہ کیا تھا۔
اس واقعے کے بعد انہوں نے اپنا علاج شروع کرادیا جسے مکمل ہونے ایک لمبا وقت درکار ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close