مردانہ حلیے میں نابالغ لڑکیوں کی ریپ کرنے والی خاتون گرفتار

بھارتی ریاست آندھرا پردیش میں نابالغ لڑکیوں کا ریپ کرنے والی خاتون پکڑی گئی۔ خاتون نے مردوں کی طرح بال کٹوا کر مردانہ حلیہ بنایا ہوا تھا پولیس جب اسے گرفتار کرنے آئی تو اس کا شوہر اتنا خوفزدہ ہوگیا کہ اس نے تیسری منزل سے چھلانگ لگا کو اپنی زندگی ختم کر لی۔
آندھرا پردیش کے ضلع پرکاسم کے ایس پی کو ایک 17 سالہ لڑکی نے شکایت درج کرائی کہ کرشن کشور ریڈی نامی آدمی نے اس کا جنسی استحصال کیا ہے۔ ایس پی کی ہدایت پر پولیس نے تحقیقات شروع کیں تو یہ معاملہ سامنے آیا کہ کرشن کشور ریڈی کوئی آدمی نہیں بلکہ ایک شادی شدہ عورت ہے۔ خاتون جنسی کھلونوں کی مدد سے نابالغ لڑکیوں کا جنسی استحصال کرتی تھی۔
پولیس نے جب ملزمہ خاتون کے گھر پر چھاپہ مارا تو وہاں سے جنسی کھلونوں سے بھرا ہوا بیگ برآمد ہوا، پولیس نے جب اس کے شوہر سے پوچھ گچھ شروع کی تو وہ اتنا خوفزدہ ہوگیا کہ بھاگ کر اوپر چلا گیا اور تیسری منزل سے نیچے چھلانگ لگادی، پولیس نے اسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکا۔
پولیس نے مقدمہ درج کر کے مردانہ حلیہ اختیار کرنے والی خاتون کو گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزمہ خاتون پہلے نابالغ لڑکیوں سے دوستی کرتی تھی جس کے بعد انہیں مختلف قسم کے لالچ دے کر زبردستی جسمانی تعلقات قائم کرنے پر مجبور کرتی تھی، مرنے والا آدمی ملزمہ کا تیسرا شوہر تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close