گاڑیاں بنانے والے نئے پلانٹس نے پیداوار شروع کر دی

ایک جانب پاکستان میں ہونڈا اور ٹیوٹا گاڑیاں بنانے والے پلانٹس گاڑیوں کی فروخت میں شدید کمی کے باعث عارضی طور پر بند پڑے ہیں تو دوسری طرف مقامی طور پر گاڑیاں بنانے والے کئی نئے پلانٹس نے کام شروع کرتے ہوئے پروڈکشن کا آغاز کر دیا ہے۔
وزارت تجارت کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کی گئی تفصیلات کے مطابق گزشتہ ایک سال کے دوران ملک میں گاڑیاں بنانے کے خئی پلانٹس نے کام شروع کردیا ہے جب کہ مینوفیکچرنگ سرٹیفیکیٹ ملنے کے بعد ان پلانٹس سے پیداوار بھی شروع کردی گئی۔ تاہم پاکستان میں نئے پیداواری یونٹس لگنے کے باوجود گزشتہ ایک سال میں ملک میں گاڑیوں کی قیمت میں ہوشربا اضافہ اور فروخت میں کمی واقع ہوئی ہے۔ قومی اسمبلی میں وزارت تجارت کی جانب سے پیش کی گئی تفصیلات کے مطابق یونائیٹڈ موٹرز لمیٹڈ اور فوٹون جے ڈبلیو آٹو پارک پرائیویٹ لمیٹڈ نے 2018 میں آٹو موٹیو ڈویلپمنٹ پالیسی 2016-2021 کے تحت گرین فیلڈ کیٹگری میں پلانٹس لگائے اور پیداوار کا آغاز کیا۔ اسی پالیسی کےتحت ماسٹرز موٹرز لمیٹڈ، کیا لکی موٹرز اور ہنڈائی نشاط موٹرز نے 2019 میں گاڑیوں کے نئے پلانٹس لگائے۔ ان تینوں پلانٹس سے پیداوار کا آغاز بھی کردیا گیا ہے۔
وزارت تجارت کے مطابق رواں سال آٹو موٹیو ڈویلپمنٹ پالیسی کےتحت چار اسمبلنگ یونٹس کو بھی گرین فیلڈ کا درجہ دیا گیا ہے۔ یہ درجہ پانے والوں میں پریمئیر موٹرز لمیٹڈ، سائنو پاک ای موٹرز پرائیویٹ لمیٹڈ، الحاج آٹو موٹیو پرائیویٹ لمیٹڈ اور ڈائسن آٹو موبائل لمیٹڈ شامل ہیں۔
وزارت تجارت نے جون 2016 میں آٹو موٹیو ڈویلپمنٹ پالیسی کا اعلان کیا تھا جس کے بعد سے اب تک 18 سرمایہ کار کمپنیوں کو گرین فیلڈ کیٹگری دی گئی ہے اور ان کمپنیوں نے پاکستان میں ایک ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ ان کمپنیوں کا تعلق چین، کوریا، جرمنی، ملائیشیا، جنوبی کوریا اور جاپان سے ہے۔ یہ کمپنیاں لاہور، کراچی، فیصل آباد، ڈی جی خان، میانوالی، گڈانی، لسبیلہ اور چکوال میں اپنے پلانٹس لگائیں گی۔
پاکستان میں نئے پیداواری یونٹس لگنے کے باوجود گزشتہ ایک سال میں گاڑیوں کی قیمت میں اضافہ اور فروخت میں کمی واقع ہوئی ہے، جس کی بنیادی وجہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں کمی اور حکومت کی جانب سے درآمدی ڈیوٹی میں اضافہ اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا اطلاق قرار دیا جا رہا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!
Close