وزیراعظم سمیت وفاقی وزراء کی مریم کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی مخالفت

وزیراعظم عمران خان سمیت متعدد وفاقی وزراء نے مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نوازکو باہر جانے کی اجازت دینے اور ان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ ای سی ایل سے نکالنے کی مخالفت کردی ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ملکی معاشی و سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں مریم نواز کی بیرون ملک روانگی کا ذکر بھی آیا اور وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے مریم نوازکی بیرون ملک روانگی کی سخت مخالفت کی۔ ذرائع کے مطابق فیصل واوڈا نے مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت کسی صورت مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نہ نکالے۔ وزیراعظم عمران خان سمیت متعدد وزراء نے فیصل واوڈا کی رائے سے اتفاق کیا۔
خیال رہے کہ 10 جولائی 2018 کو وزارت داخلہ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا پانے کے بعد نوازشریف اور مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالا تھا تاہم بعد ازاں اس کیس میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے ان کی سزا معطل کردی تھی۔
9 دسمبر کے روز لاہور ہائیکورٹ نے مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کے لیے وفاقی حکومت کو 7 روز میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا۔ مریم نواز اپنے والد نواز شریف کی لندن میں تیمار داری کے لیے جانا چاہتی ہیں اور اسی وجہ سے انہوں نے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی تھی۔
خیال رہے کہ نیب نے مریم نواز کو 8 اگست کو اپنے والد نواز شریف سے ملاقات کے دوران کوٹ لکھپت جیل سے گرفتار کیا تھا تاہم گزشتہ ماہ لاہور ہائیکورٹ نے چوہدری شوگر ملز منی لانڈرنگ کیس میں مریم نواز کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں اپنا پاسپورٹ اور ایک ایک کروڑ روپے کے دو مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!
Close