انسانی ہاتھوں سےبنا’دنیاکاقدیم ترین‘کنواں دریافت

یورپی ملک چیک ری پبلک میں 7 ہزاربرس قدیم لکڑی سے بنا کنواں دریافت ہوا ہے جسے تاریخ کا قدیم ترین انسانی ہاتھوں سے بنایا گیا کنواں قراردیا جارہا ہے۔ چیک ری پبلک میں دریافت ہونے والا یہ کنواں لکڑی سے تعمیر شدہ ہے اوراسے انسانی ہاتھوں سے بنائی گئی لکڑی کی قدیم ترین تعمیرقراردیا جارہا ہے۔
ایک اندازے کے مطابق یہ 5 ہزار255 قبل مسیح میں بنایا گیا یعنی اس کی عمر 7 ہزار275 سال ہے۔ ماہرین کے مطابق یہ اس دور کی ایک غیر معمولی شے ہے کیونکہ اس وقت لوگ تعمیرات میں جدت پسند نہیں ہوئے تھے۔ اس دور میں لوگ سادے مکان بناتے تھے جبکہ وہ چکنی مٹی سے مختلف اشیا بنانے کےماہر تھے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ اس دوراوراس علاقے کی اپنی نوعیت کی واحد دریافت ہے۔
کنویں کے یہ آثارسنہ 2018 میں ایک موٹر وے کی تعمیر کے دوران سامنے آئے تھے، یہ زمین سے5 فٹ گہرائی میں واقع تھے۔ بعد ازاں اس پرتحقیقی کام مکمل کر کے اب جاری کیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close