ماہانہ ڈیڑھ کروڑ روپے کمانے والا شخص سینڈوچ چرانے پر نوکری سے فارغ

لندن میں سالانہ 10لاکھ پاﺅنڈ سالانہ (تقریباً 20کروڑ روپے سالانہ یا ڈیڑھ کروڑ روپے ماہانہ) سے زائد کمانے والے بھارتی بینکر کو کھانا چوری کرنے پر نوکری سے ہاتھ دھونا پڑگیا۔
تفصیلات کے مطابق پارس شاہ نامی بینکر پر الزام تھا کہ انہوں نے سٹی بینک ہیڈ کوارٹرز کے کینٹین سے سینڈوچ چوری کیا، جس کے بعد انہیں نکال دیا گیا۔
واضح رہے کہ 31 سالہ پارس شاہ نے 2017 سے امریکی بیکنگ گروپ کے لندن ہیڈ کوارٹرز میں اہم عہدے پر تعینات تھے۔
ان کی اس حرکت کے باعث انہیں اپنی نوکری سے ہاتھ دھونا پڑا مگر اس حوالے سے کوئی تفصیل سامنے نہیں آئی کہ پارس شاہ اپنے دفتر کے کینٹین سے کتنی مرتبہ کھانا چوری کرچکے ہیں۔
رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ سٹی بینک ہیڈ کوارٹرز اپنے ملازمین کےلیے جلد بونس کا اعلان بھی کرنے والا تھا تاہم پارس شاہ کو اس سے چند ہفتے قبل ہی نوکری سے فارغ کردیا گیا۔ پارس شاہ کے سابق ساتھیوں نے میڈیا کو بتایا کہ وہ ایک کامیاب ٹریڈر تھے جن کے کام کو پسند کیا جاتا تھا۔
دوسری جانب سٹی بینک نے اس حوالے سے کوئی بھی بیان جاری نہیں کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close