خرابی صحت،شبر زیدی نے اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کی پیشکش کر دی

فیڈرل بورڈ آف ریونیو ایف بی آر کے چیئرمین شبر زیدی نے عہدے پر کام جاری رکھنے سے معذرت کرتے ہوئے اپنے عہدے سےمستعفی ہونے کی پیشکش کر دی ہے. تاہم انھوں نے واضح کیا ہے کہ ابھی تک استعفی نہیں دیا تاہم خرابی صحت کی وجہ سے کام جاری نہیں رکھ سکتا.
ذرائع کے مطابق شبر زیدی نے ذاتی وجوہات کی بنا پر ایف بی آر چئیرمین کے عہدے پر کام جاری رکھنے سے معذرت کرلی ہے. شبرزیدی کا کہنا ہے کہ وہ بیمار ہیں اور ڈاکٹر نے انہیں آرام کا مشورہ دیا ہے جس کے باعث وہ مزید کام جاری نہیں رکھ سکتے۔ شبر زیدی نے بتایا کہ ان کی اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان سے بات ہو گئی ہےکہ خرابی صحت کی وجہ سے وہ مزید ذمہ داریاں نہیں سنبھال سکتے۔ شبر زیدی نے کہا کہ انہوں نے وزیراعظم سے درخواست کی ہے کہ چیئرمین ایف بی آر کیلئے نیا نام تلاش کرلیں۔میری درخواست پر وزیراعظم خود فیصلہ کریں گے.
ذرائع کے مطابق نئے چیئرمین ایف بی آر کیلئے احمد مجتبی میمن، جاوید غنی، نوشین جاوید امجد سمیت دیگر نام زیر غور ہیں جبکہ ہارون اختر کو مشیر تعینات کئے جانے کا امکان ہے۔ چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی گزشتہ کئی روز سے چھٹیوں پر تھے اور ان کی غیر حاضری میں افواہیں اور قیاس آرائیاں جنم لے رہی تھیں۔ مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور شبر زیدی کے درمیان اختلافات کی خبریں بھی سامنے آئی تھیں۔ شبر زیدی نے اختلافات کی خبروں کو بے بنیاد قرار دے کر تردید کردی تھی۔ شبر زیدی کی طبعیت ناسازی کہ خبریں کئی روز سے گردش کر رہی تھیں جبکہ گذشتہ ہفتے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے شبر زیدی کی تبدیلی کا عندیہ دیا تھا۔
ذرائع کے مطابق شبر زیدی نے صحت کی خرابی کی بنا پر عہدہ چھوڑاہے۔ شبر زیدی نے اپنے فیصلے سے متعلق اعلیٰ حکام کو آگاہ کر دیا ہے۔اس حوالے سے شبر زیدی کا کہنا ہے کہ میں بیمار ہوں مزید کام جاری نہیں رکھ سکتا،ڈاکٹرز نے مجھے آرام کا مشورہ دیا ہے۔ یاد رہے چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کی طبیعت اچانک ناساز ہوگئی تھی ۔ طبیعت ناسازی کے باعث چئیرمین ایف بی آر کے رخصت پرچلے گئے تھے۔
دوسری طرف مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ چیرمین ایف بی آر شبر زیدی کی طبیعت بہت خراب ہے، اگر شبر زیدی کی طبیعت بہتر نہ ہوئی تو متبادل دیکھیں گے، نیا چیئرمین اگر تلاش کیا تو شبر زیدی کی مشاورت سے کریں گے۔۔شبر زیدی کی واپسی کا فیصلہ ڈاکٹر ہی کرے گا۔۔
شبر زیدی کپتان کی معاشی ٹیم کے ایک بہت اہم کھلاڑی تھے۔انہوں نے دو ہفتے کی چھٹیوں کے بعد 21 جنوری کو دوبارہ دفتر سنبھالا تھا مگر ان کی طبعیت نہیں سنبھل پائی اور پھر وہ غیر معینی مدت کیلئے رخصت پرچلے گئے تھے. بعد ازاں مشیر خزانہ عبد الحفیظ شیخ نے شبر زیدی کی تبدیلی کا عندیہ دیا تھا جبکہ وزیر اعظم عمران کان نے کہا تھا کہ شبر زیدی کی طبعیت بہت خراب ہے اور وہ ان کی درخواست پر 6 ماہ کیلئے آئے تھے تا ہم اب ان کی جگہ نئے چئیرمین ایف بی آر کی تعیناتی کیلئے معاشی ٹیم کو موزوں امیدوار کے انتخاب کی ہدایت کی ہے.
واضح رہے ماضی میں سندھ کی نگراں حکومت کے دوران وزیر خزانہ کے طور پر خدمات انجام دینے والے شبر زیدی پیشے کے اعتبار سے چارٹرڈ اکاونٹنٹ ہیں۔ شبر زیدی ملک میں قائم انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس آف پاکستان اورساؤتھ ایشین فیڈریشن آف اکاؤنٹنٹس کے صدر رہ چکے ہیں۔ انہوں نے زندگی کا بیشتر حصہ نجی شعبے کے ساتھ کام کرتے ہوئے گزارا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close