گزشتہ 18 ماہ میں انرجی سیکٹر میں قابل وصول رقم 27 فیصد تک بڑھ گئی

انرجی سیکٹر میں گزشتہ 18 ماہ کے دوران قابل وصول رقم 27 فیصد تک بڑھ گئی۔ پاور ڈویژن کی تفصیلی رپورٹ کے مطابق تمام ترسیلی کمپنیوں (ڈسکوز) کی قابل وصول رقم جون 2018 کے 8 کھرب 17 ارب 50 کروڑ روپے سے بڑھ کر 31 دسمبر 2019 کو 10 کھرب 37 ارب روپے ہوگئی۔
نجی شعبے کے قابل وصول رقم اس ہی عرصے کے دوران 24 فیصد بڑھی جو 6 کھرب 70 ارب سے بڑھ کر 8 کھرب 30 ارب ہوگئی جو 1 کھرب 60 ارب روپے کا اضافہ ظاہر کرتا ہے۔
ڈیٹا کے مطابق اس شعبے کو موثر بنانے اور وصولی کی مہم کو چلانے والی وفاقی حکومت کی جانب قابل وصول رقم میں 137 فیصد اضافہ ہوا جو کسی بھی شعبے سے کی جانب سے قابل وصول رقم میں سب سے زیادہ اضافہ ہے۔ ڈسکوز کو وفاقی حکومت کی جانب سے 30 جون 2018 کو قابل وصول رقم 7.2 ارب روپے رھے جو دسمبر 2019 میں بڑھ کر 17.1 ارب روپے ہوگئے۔
آزاد جموں و کشمیر سے توانائی کے شعبے کے لیے قابل وصول رقم اس ہی عرصے میں 28 فیصد 99 ارب کے مقابلے میں 1 کھرب 27 ارب روپے ہوگئی۔ اسی طرح صوبائی حکومتوں سے قابل وصول رقم جون 2018 کے 40.4 ارب روپے کے مقابلے میں دسمبر 2019 میں بڑھ کر 62.3 ارب روپے تک پہنچ گئی۔
عوامی شعبوں کے صارفین سے قابل وصول رقم میں 41 فیصد اضافہ ہوا جو جون 2018 میں 46.84 ارب کے مقابلے میں بڑھ کر 31 دسمبر 2019 کو 1 کھرب 46 ارب 84 کروڑ روپے ہوگئی۔ صرف یہی کافی نہیں حکومت کی جانب سے سبسڈیز کی مد میں قابل وصول رقم میں 25 فیصد اضافہ ہوا جو 98 ارب روپے کے مقابلے میں 1 کھرب 21 ارب 50 کروڑ روپے ہوگئی۔ ڈیفالٹرز کی جانب سے قابل وصول رقم میں بھی 18 ماہ میں 30 فیصد اضافہ ہوا جو 405 ارب روپے کے مقابلے میں 525 ارب روپے ہوگئی۔
دوسری جانب جولائی سے دسمبر 2019 تک کل بلنگ کے برعکس کل ریکوری میں بھی گزشتہ سال کے اس ہی عرصے کے مقابلے میں 1 فیصد کمی آئی۔ جولائی سے دسمبر 2019 کے درمیان کل ریکوری 92.49 فیصد ہوئی جو 2018 میں اس ہی عرصے کے دوران 93.47 فیصد تھی۔
صرف گوجرانوالہ، اسلام آباد اور پشاور الیکٹرک کمپنیوں میں بہتری سامنے آئی۔
رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں کل 923 ارب روپے کے بل میں سے 847 ارب روپے وصول ہوئے جب کہ 76 ارب روپے وصول نہیں کیے جاسکے۔
جولائی سے دسمبر کے درمیان کل بلنگ میں 24 فیصد اضافہ ہوا جو گزشتہ سال اس ہی عرصے کے دوران 744 ارب روپے کے مقابلے میں 923 ارب روپے کی گئی۔
دوسری جانب جولائی سے دسمبر 2019 کے درمیان کل وصول کی گئی بلنگ 847 ارب روپے رہی جو گزشتہ سال اسی عرصے کے دوران 677 فیصد تھی اور یہ 25 فیصد اضافہ ظاہر کرتی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close