بچوں کے گیلے ڈائپر کی خبر دینے والا سنسر تیار

بچوں کے گیلے ڈائپر سے پریشان ماؤں کی مشکلات کا احساس کرتے ہوئے میساچیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (ایم آئی ٹی) کے انجینئرز نے ایک چھوٹا آرایف آئی ڈی سینسر بنایا ہے جو ڈائپر گیلا ہونے پر والدہ یا دیگر افراد کو ایک پیغام بھیجتا ہے۔ اسے بنانا بہت آسان ہے جس میں ایک پیمپر کی قیمت دو سینٹ یا پاکستانی تین روپے کے برابر ہے۔
آرایف آئی ڈی سینسر کو کسی بھی ہائیڈروجل والے ڈائپر میں لگایا جاسکتا ہے کیوں کہ ہائیڈروجل ڈائپر میں عام پائے جاتے ہیں۔ اسے لگانے سے پیمپر کی ساخت اور وزن پر کوئی فرق بھی نہیں پڑتا۔ جیسے ہی قضائے حاجت کی صورت میں ڈائپر گیلا ہوتا ہے آر ایف آئی ڈی سینسر ایک میٹر کے دائرے میں اس کی خبر دیتا ہے جسے فون یا ٹیبلٹ پر دیکھا جاسکتا ہے۔ سینسر کےلیے علیحدہ بیٹری لگانے کی کوئی ضرورت نہیں ہوتی اور یہ گھر کے وائی فائی سے جڑے نیٹ ورک پر بھی اس کی اطلاع دے سکتا ہے۔ اگر والدین چاہیں تو کی چین میں ایک مخصوص ریڈر بھی لگاسکتے ہیں۔
مائیں جانتی ہیں کہ گیلے پیمپرز سے نہ صرف بچے روتے ہیں بلکہ رات کے کسی بھی پہر والدین کو جگاسکتے ہیں۔ اگرچہ سینسر والے ڈائپر بنالیے گئے ہیں لیکن ان کی قیمت زیادہ ہونے کی وجہ سے وہ مقبول نہیں ہوسکے۔ پھر اس میں بیٹری اور بلیو ٹوتھ سینسر سے وہ بھاری ہوجاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close