کے پی کے اسمبلی اجلاس، حکومتی و اپوزیشن اراکین گتھم گتھا

خیبر پختونخوا اسمبلی اجلاس میں 18 فروری کے روز بھی ہنگامہ آرائی جاری رہی، اپوزیشن اور حکومتی اراکین ایک دوسرے گتھم گتھا بھی ہوئے۔
کے پی کے اسمبلی کا اجلاس اسپیکر مشتاق غنی کی زیر صدارت ہوا ، اس دوران خوب شور شرابا ہوا اور ایوان مچھلی بازار بنا رہا۔
خیبرپختونخوا اسمبلی کا اجلاس دیر سے شروع ہونے پر اپوزیشن ارکان نے احتجاج کیا تاہم تھوڑی دیر بعد اسپیکر مشتاق غنی اسمبلی میں آئے جس پر حکومتی ارکان نے کھڑے ہوکر اور ڈیسک بجاکر ان کا استقبال کیا۔ اجلاس جیسے ہی شروع ہوا اپوزیشن ارکان نے دوبارہ احتجاج شروع کردیا جس کے بعد سیکورٹی اہلکار اسپیکر ڈائس کے سامنے کھڑے ہوگئے جبکہ حکومتی اور اپوزیشن ارکان بھی اسمبلی ڈائس کے سامنے جمع ہوگئے، اسی دوران حکومتی اور اپوزیشن ارکان آپس میں گتھم گتھا ہوگئے جب کہ ایک دوسرے کے خلاف نعرے بازی بھی کی گئی۔ اسپیکر مشتاق غنی نے رولنگ دیتے ہوئے کہا کہ رولز کے تحت میرا اختیار، تنبیہ کرتا ہوں رویہ محتاط رکھیں تاہم صوبائی اسمبلی کے اجلاس کے دوران ایوان میں اپوزیشن اراکین اسپیکر ڈیسک کے سامنے کھڑے رہے اور خوب شور شرابا کرتے رہے ۔ پیپلز پارٹی کی خاتون رکن نگہت اورکزئی اپنے ڈیسک پر مسلسل کھڑی رہیں اور ان کی اسپیکر مشتاق غنی سے گرما گرمی بھی ہوئی۔ اسپیکر مشتاق غنی نے خیبرپختونخوا اسمبلی کا اجلاس جمعہ کے روز صبح 10 بجے تک ملتوی کردیا ۔
خیال رہے کہ گذشتہ روز بھی خیبر پختونخوا اسمبلی کے اجلاس کے دوران ایوان میں خوب شور شرابا ہوا تھا اور اپوزیشن اراکین نے اسپیکر ڈائس کا گھیراؤ کرلیاتھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close