ٹانک سے تعلق رکھنے والی خاتون کمانڈو یواین مشن کے لئے منتخب

خیبر پختونخوا کے ضلع ٹانک سے تعلق رکھنے والی لیڈی کمانڈو گل نسا کو اقوام متحدہ کے امن مشن کے لئے منتخب کرلیا گیا۔
24 سالہ گل نسا کا تعلق ٹانک کے دورافتادہ قصبے ونڈہ زلو ہے جسے یواین مشن کے لئے کے پی پولیس کی جانب سے پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل ہوگا۔ گل نسا اپنے علاقے کی واحد خاتون ہیں جو پہلی بار اقوام متحدہ کے امن مشن میں جائیں گیں۔
گل نسا اس مہینے کے آخر یا اگلے مہینے امن مشن پر سوڈان روانہ ہو جائیں گی جہاں وہ ایک سال تک کام کریں گی۔
گل نسا خیبر پختونخوا پولیس کو 2012 میں جوائن کیا، سال 2015 میں بطور کانسٹیبل ایلیٹ فورس کے دستے کا حصہ بنیں جس کے بعد کے پولیس کی جانب سے انہیں ڈیرہ اسماعیل خان میں تعینات کردیا گیا۔
گل نسا نے کہا کہ ان کی ایک بہت بڑی خواہش پوری ہوئی ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے پولیس امن مشن کےلیے منتخب ہوئی ہیں۔ گل نسا کہتی ہیں کہ سوڈان پولیس امن مشن کے لیے پورے ملک سے 24 خواتین اور 400 مرد منتخب ہوئے ہیں۔ گل نسا کے مطابق وہ اپنے گاؤں کی واحد خاتون ہیں جنہوں نے پولیس کا محکمہ جوائن کیا۔
میں نے اقوام متحدہ کے امن مشن کےلیے درخواست دی تھی، اقوام متحدہ کی پولیس نے ہمارا ٹسیٹ لیا تھا جس میں میرے ساتھ پشاور کی ایک اور ساتھی بھی کامیاب ہوئی ہیں۔
24 سالہ گل نسا کو بچپن ہی سے یونیفارم پہننے کا شوق تھا۔وہ کہتی ہیں کہ ہمیشہ یونیفارم پہننے والی خواتین کو شوق سے دیکھتیں اور یہ خواہش ہوتی کہ وہ بھی ایک دن ان کی طرح یونیفارم پہنیں گی۔
سوڈان میں امن و امان کی صورت حال کے بارے میں گل نسا کا کہنا ہے کہ ہم نے خیبر پختونخوا میں دہشت گردی سے متاثرہ علاقے میں کام کیا ہے تو میرا نہیں خیال کہ سوڈان میں کام کرنا مشکل ہوگا۔
سوڈان میں اپنے فرائض سے متعلق بات کرتے ہوئے گل نسا کا کہنا تھا کہ وہاں قانون نافذ کرنا، پیٹرولنگ، آپریشنز اور سکیورٹی کے فرائض سرانجام دینا ہوں گے۔ گل نسا کہتی ہیں کہ انہوں نے ایک ایسے معاشرے میں بہت مشکل سے جگہ بنائی ہے جہاں ہر قدم پر خواتین کے لیے مشکلات ہوتی ہیں۔گل نسا نے اسلامی تاریخ میں ماسٹرز کیا ہوا ہے اور وہ اپنے خاندان کی کفیل بھی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close