آنکھیں دنیا دیکھتی ہیں لیکن کچھ آنکھوں کو دنیا دیکھتی ہے

شوبز کی چمکتی دمکتی دنیا میں خوبصورت نظر آنے کے لیے مصنوعی لوازمات کا سہارا لیا جاتا ہے لیکن کچھ خوش قسمت لوگ قدرتی حسن سے مالامال ہوتے ہیں۔ آنکھیں بڑی نعمت ہیں’۔ آنکھیں سب کچھ دیکھتی ہیں لیکن کچھ آنکھوں کو ان کے رنگ اور ساخت میں منفرد ہونے کی وجہ سے دنیا دیکھتی ہے۔ آج ہم آپ کو دنیا بھر سے ایسے ہی کچھ لوگوں کے بارے میں بتائیں گے جو اپنی آنکھوں کی بدولت لوگوں کی توجہ کا مرکز بنے۔

معصوم مسکراہٹ لیے ہوئے نیلی آنکھوں والا ابوشے نامی افریقی لڑکا اپنی آنکھو ں کی وجہ سے مشہور ہے۔ یہ آنکھیں دنیا کی نیلی ترین آنکھیں کہی جا سکتی ہیں۔اس بچے کے چہرے کی تمام معصومیت اس کی آنکھوں کے رنگ میں سمٹی ہوئی نظر آتی ہے۔

سوشل میڈیا پر ایک نامعلوم پراسرار آنکھوں والا ایسا بچہ بہت مشہور ہےجس کی آنکھیں دیکھ کر ایسا لگتاہے کہ ان کے پیچھے سے کوئی روشنی جھلک رہی ہے۔ اس بچے کی آنکھوں کا تاثر پراسرار سا ہو جاتا ہے۔ انٹرنیٹ پر اس نامعلوم بچے کی تصویر کا شمار خوبصورت ترین آنکھوں میں ہوتا ہے۔

انٹرنیٹ پر وائرل ہونے والی ایک تصویر میں نظر آنے والی بچی کی آنکھوں کی ہر کوئی تعریف کرتا نظر آتا ہے۔ اس بھارتی بچی کی آنکھیں بلا شبہ دنیا کی خوبصورت ترین آنکھیں کہی جا سکتی ہیں،ان آنکھوں کر دیکھ کر کہا جاسکتا ہے کہ یہ شاید اصل آنکھیں نہ ہوں۔

بھارت ہی کے ایک گاوں سے تعلق رکھنے والی ایک بچی اپنی آنکھوں کی وجہ سے جادوگرنی سمجھی جاتی ہے ۔

افغانستان سے تعلق رکھنے والی شربت گل بی بی کی آنکھیں دنیا بھر میں اپنے رنگ اور آنکھوں میں اپنے منفرد تاثر کی وجہ سے مشہور ہوئیں۔

شوبز کی چمکتی دمکتی دنیا میں خوبصورتی کیلئے مصنوعی لوازمات کا سہارا لیا جاتا ہے ، لیکن ہالی وڈ کے نامور ستارے بریڈلے کوپر کے مطابق ان کی آنکھیں اصلی ہیں، یہ کانٹیکٹ لینس نہیں ہیں ان کی آنکھوں کو شوبز میں خوبصورت ترین قرار دیا جاتا ہے۔

دونوں آنکھوں میں مختلف رنگ لیے ہوئے ہالی وڈ کے مشہور فنکار ڈیوڈ بوئی اپنے فن کی وجہ سے تو مشہور تھے ہی لیکن ان کی دو مختلف رنگ کی آنکھیں ان کی شہرت کی زیادہ بڑی وجہ بنیں۔

مہلانی نامی بچی کی آنکھیں دیکھ کر ہر کوئی اس کی خوبصورتی کی تعریف کرتا نظر آتا ہے لیکن مہلانی نام کی بچی کی آنکھوں کی یہ بناوٹ ایک جینیاتی بیماری کی وجہ سے ہے جس کی وجہ سے اسے بینائی کے حوالے سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!
Close