موٹروے ریپ کیس: متاثرہ خاتون نے ملزمان کی شناخت کر لی

موٹروے ریپ کیس کی متاثرہ خاتون نے ملزمان کی شناخت کرلی ہے، خاتون کا کہنا ہے کہ وزیراعظم سے مطالبہ کرتی ہوں کہ ملزم عابد اور شفقت کو پھانسی دی جائے، تب ہی میری روح کو سکون ملے گا۔
سانحہ گجر پورہ کی تفتیش کے دوران اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ متاثرہ خاتون نے ملزمان شفقت اور عابد کی شناخت کر لی ہے۔ منگل کے روز ملزمان کی شناخت پریڈ کے لیے جیل میں خصوصی انتظام کیا گیا تھا تاہم خاتون نے جیل میں آنے سے انکار کر دیا جس کے بعد خاتون کو ملزمان کی تصاویر بھیجی گئیں۔ متاثرہ خاتون نے تصاویر دیکھ کر ملزمان کی شناخت کر لی اور پھر وزیر اعظم عمران خان سے ملزمان کو پھانسی کی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ ملزمان کو پھانسی کی سزا دینے سے ہی ان کی روح کو سکون ملے گا، ان کے ساتھ ہونے والے ظلم و جبر کا ازالہ ممکن ہو سکے گا۔ انھوں نے مزید کہا کہ ایسے ملزمان کے لیے کوئی بھی نرمی برتنے کی ضرورت نہیں ہے، انہیں سخت سے سخت سزا ملنی چاہے۔
خیال رہے کہ منگل کے روز انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سانحہ موٹروے کے ملزم شفقت کے ریمانڈ پر سماعت کی تھی ،ملزم کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا ہے۔ دوسری جانب سانحہ موٹروے کا مرکزی ملزم عابد تاحال مفرور ہے جبکہ ملزم شفقت جو عابد کا ساتھی تھا پولیس کی گرفت میں ہے۔ملزم شفقت نے اعتراف جرم بھی کیا ہے اور عابد کا شریک جرم ہونے کا بھی اعتراف کیا۔ ملزم شفقت نے دوران حراست پولیس کو دیے گئے بیان میں سانحہ گجر پورہ کی واردات کی تمام تفصیلات بیان کیں۔ اس کیس میں ملوث ایک اور ملزم اقبال عرف بالا کو بھی منگل کے روز گرفتار کر لیا گیا۔ پولیس اور حکومت پنجاب کا دعویٰ ہے کہ مرکزی ملزم عابد علی کو ٹریس کیا جا رہا ہے، اسے جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔
ادھر زیادتی کیس کی تحقیقات میں پولیس کیلئے نئی مشکل سامنے آ گئی ہے، ابھی تک متاثرہ خاتون کا بیان ریکارڈ نہیں ہو سکا ہے۔ پولیس کی جانب سے خاتون کا بیان ریکارڈ کرنے کے لئے کوششیں جاری ہیں۔ پولیس حکام کے مطابق خاتون کے بیان کے بغیر کیس کو آگے بڑھانا مشکل ہوگا۔خیال رہے کہ ریمانڈ پر بھیجے گئے ملزم شفقت نے ابتدائی تفتیش میں ہی اقبال جرم کر لیا تھا اور اس کا ڈی این اے بھی میچ کر چکا ہے۔ گرفتاری دینے والے ملزم وقار الحسن کا ڈی این اے میچ نہیں ہوا، ملزم موقع پر موجود تھا یا نہیں ابھی تصدیق ہونا بھی باقی ہے۔ادھر کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کا مزید کرمنل ریکارڈ سامنے آیا ہے۔ ملزم زمین کے قبضہ کی خاطر اپنے ماموں کو بھی قتل کر چکا ہے۔ ملزم عابد علی پر قتل، زیادتی اور وارداتوں سمیت اجتماعی زیادتی کے 8 مقدمات درج ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close