60 سیکنڈز میں سانس کے ذریعے کورونا کی تشخیص

عالمی وبا کورونا وائرس کی تشخیص کا عمل بھی کافی تکلیف دہ ہوتا ہے لیکن اب اس کے ٹیسٹ کے لیے آسان طریقہ دریافت کرلیا گیا ہے۔
حال ہی میں سنگاپور کی نیشنل یونیورسٹی کی اسپن آف کمپنی میڈٹیک اسٹارٹ اپ بریتھونکس کی جانب سے کورونا وائرس کی تشخیص کےلیے ’بریتھالیسر ٹیسٹ‘ دریافت کیا گیا ہے جو ایک منٹ کے اندر کورونا وائرس کی تشخیص کر سکتا ہے۔
’بریتھالیسر ٹیسٹ‘ نے اپنے پائلٹ کلینکل ٹرائل کے دوران 180 مریضوں کے ٹیسٹ کیے جس کے نتائج 90 فیصد درست تھے۔ فی الحال کورونا وائرس کی تشخیص کےلیے عام طور پر پی سی آر ٹیسٹ کیا جاتا ہے جس میں ناک اور حلق سے نمونہ لیا جاتا ہے اور یہ کافی تکلیف دہ بھی ہوتا ہے جب کہ اس کے نتائج بھی چند گھنٹوں بعد سامنے آتے ہیں۔ لیکن نیا ’بریتھالیسر ٹیسٹ‘ صرف مشتبہ شخص کی سانس کے ذریعے کیا جاتا ہے جس سے کورونا وائرس کی تشخیص کی جا سکتی ہے۔ اس ٹیسٹ میں ماہرین مشتبہ شخص کی سانس میں بدلنے والے اورگینگ کمپاؤنڈ کی جانچ کرتے ہیں۔
بریتھونکس کمپنی کے سی ای او ڈاکٹر جیا ژہنہان کا کہنا ہے کہ مختلف بیماریوں کے باعث سانس میں موجود کمپاؤنڈز بھی تبدیل ہوتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ مشتبہ شخص کی سانس میں موجود کمپاؤنڈ میں ہونے والی تبدیلی سے بیماری کا پتہ لگایا جا سکتا ہے۔ ان کے مطابق یہ مشین لرننگ سافٹ وئیر سے 60 سیکنڈز میں نتائج بتانے کی صلاحیت رکھتی ہے جب کہ اس ٹیسٹ کو کرنے کے لیے خصوصی تربیت یافتہ اسٹاف یا لیبارٹری کی ضرورت بھی نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!
Close