پیپلز پارٹی پی ڈی ایم کے ہر فیصلے کے ساتھ ہے

سابق صدر آصف علی زرداری نے اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) اجلاس میں کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کا وہی فیصلہ ہوگا جو پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پر کیا جائے گا۔
اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کا اہم اجلاس سربراہ مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت ہوا جس میں سابق وزیراعظم و مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف، سابق صدر آصف علی زرداری اور پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔اجلاس میں بلوچستان نیشنل پارٹی (بی این پی) مینگل کے سربراہ اختر مینگل نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں ملکی معاشی اور سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور کئی اہم فیصلے کیے گئے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ اپوزيشن جماعتیں جلسوں کا سلسلہ جاری رکھیں گی، 22 نومبر کو پشاور، 30 نومبر کو ملتان اور 13 دسمبر کو لاہور میں جلسہ ہوگا۔دوسری جانب اجلاس میں نواز شریف کے بیانیے پر گرما گرم بحث ہوئی۔ اس موقع پر آصف زرداری نے کہا ہےکہ پیپلزپارٹی کا وہی فیصلہ ہوگا جو پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پرکیا جائے گا۔ن لیگ کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پی ڈی ایم کے پاس نوازشریف کا بیانیہ قبول کرنے کے علاوہ راستہ کیا ہے؟ راجا پرویز اشرف نے کہا کہ اگر جلسوں ميں اسٹیبلشمنٹ کے بجائے افراد کے نام لینے ہیں تو پی ڈی ایم کا نیا اجلاس بُلاکر طے کرنا ہوگا۔سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہمیں اپنی جماعتوں کے بیانیے سے بالاتر ہوکر مشترکا مؤقف اختیار کرنا ہوگا۔
خیال رہے کہ گزشتہ دنوں پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے غیرملکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں کہا تھا کہ پی ڈی ایم کے جلسے میں فوجی قیادت کا نام لینا مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کا اپنا فیصلہ تھا۔بلاول کے انٹرویو کو وفاقی وزراء نے خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ بلاول کا انٹرویو ذمہ دارانہ ہے، پی پی (ن) لیگ کے ساتھ نہیں چلے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close