بختاور بھٹو زرداری کے ہونے والے شوہر کس کی چوائس ہیں؟


بختاور بھٹو زرداری کے ہونے والے شوہر محمود چوہدری سابق صدر آصف علی زرداری کی چوائس ہیں جنہوں نے محمود کی شخصیت خصوصا انکے اخلاق اور شرافت سے متاثر ہو کر اپنی بیٹی کا ہاتھ ان کے ہاتھ میں دینے کا فیصلہ کیا۔
اس بات کا انکشاف دبئی میں مقیم بختاور بھٹو زرداری کے منگیتر چوہدری محمود کے والد چوہدری یونس کے 30 سال پرانے دوست ادریس خان نے ایک انٹرویو میں کیا ہے۔ سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو اور سابق صدر آصف علی زرداری کی بیٹی بختاور بھٹو زرداری کی پنجاب کے آرائیں خاندان میں رشتہ طے ہونے پر ملک بھر میں بحث جاری ہے۔ لوگ جاننا چاہتے ہیں کہ لاہور کے فاروق گنج محلہ سے تعلق رکھنے والے بختاور بھٹو زرداری کے منگیتر چوہدری محمود آرائیں اور ان کے والد چوہدری یونس آرائیں کون ہیں اور یہ کہ رشتہ کیسے طے پایا؟
ان سوالوں کا جواب تلاش کرنے کے لیے لاہورریلوے سٹیشن کے قریب محلہ فاروق گنج مصری شاہ کے علاقے میں چوہدری یونس کے آبائی گھر، حویلی اور کمیونٹی سینٹرکے آس پاس لوگوں کی رائے جانی گئی۔ محلے داروں نے بتایا کہ یہ لوگ یہاں کبھی کبھار آتے ہیں، گھر میں ملازم رہتے ہیں، حویلی بھی ان کی آمد پر کھلتی ہے لیکن یہاں کے کمیونٹی سینٹر میں محلے کے لوگوں کی شادیاں اور تقریبات مفت ہوتی ہیں، جو چودھری خاندان نے عام لوگوں کے لیے مختص کر رکھا ہے۔ اہل علاقہ نے خاندان کی سخاوت کا ذکر کرتے ہوئے چوہدری محمود کی بختاورسے منگنی طے ہونے پر حیران کن خوشی کا اظہار کیا۔ انہوں نے بتایا کہ چوہدری یونس دبئی سے پاکستان آتے ہیں تو شہر کے پوش علاقے جوہر ٹاؤن میں رہتے ہیں۔
اب سوال یہ ہے کہ لاہور کا یہ آرائیں خاندان پیپلز پارٹی اور بھٹو خاندان سے کیسے جڑا؟اس سوال کا جواب دیتے ہوئے چوہدری یونس کے 30 سال پرانے دوست ادریس خان نے بتایا کہ وہ 50 پیسے فیس دے کر بننے والے پیپلز پارٹی کے بانی اراکین میں شامل ہیں اور چوہدری یونس بھی پیپلز پارٹی کے پرانے رکن ہیں لیکن وہ سیاسی طور زیادہ متحرک نہیں تھے۔ ’ان کے بیٹے چوہدری محمود نے 2013 کے انتخابات سے پہلے اپنے والد سے پیپلز پارٹی میں شامل ہونے کی درخواست کی تو انہوں نے اسے میرے حوالے کردیا۔ میں نے چوہدری محمود کی ملاقات تب پارٹی کے سیکرٹری جنرل جہانگیر بدر سے کروائی، جنہوں نے محمود کو بلاول ہاؤس لاہور میں زرداری صاحب سے ملوایا تھا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ’محمود نے الیکشن تو نہ لڑا لیکن جب پنجاب میں پی پی پی 2013 میں شکست سے دوچار ہوئی تو وہ بہت رنجیدہ ہوئے اور آصف علی زرداری سے افسوس کرنے گئے لیکن انہوں نے محمود کو حوصلہ دیا کہ خیر ہے سیاست میں یہ سب چلتا ہے۔ اسی دوران زرداری صاحب نے محمود کو بلاول بھٹو زرداری کے قریب کیا۔‘
ادریس خان کا کہنا ہے کہ لوگ سمجھتے ہیں چوہدری یونس اور ان کے بیٹے کی اچانک انٹری ہوئی ہے لیکن وہ غلط ہیں، وہ کئی سالوں سے بلاول اور زرداری کے قریب ہیں۔ ’یہ کئی دھائیاں پہلے دبئی شفٹ ہوگئے تھے، وہاں لوہے کا کاروبار شروع کیا تھا اور تب ہی سے یہ ایک مالدار گھرانہ ہے۔ دبئی میں محمود کے والد کو یونس کرین والا کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ کچھ لوگ دبئی کے یونس کو امریکہ والے یونس کے ساتھ مکس کرتے ہیں کیونکہ وہ بھی اپنے نام کے ساتھ چوہدری لگاتے ہیں۔ اس حوالے سے کچھ غلط فہمیاں بھی پیدا کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ لیکن حقیقت یہ ہے کہ دبئی والے چوہدری یونس اور ہیں اور امریکہ والا چوہدری یونس اور ہے جو کہ قادیانی فرقے سے تعلق رکھتا یے۔
چوہدری یونس کے خاندان نے دبئی میں کنسٹرکشن بزنس میں بھی اپنا نام اور ساکھ بنائی ہے اور اب انکا کنسٹرکشن مشینری سپلائی کرنے کا کام بھی بہت پھیل چکا ہے۔
جب ادریس خان سے پوچھا گیا کیا بچوں نے ایک دوسرے کو خود پسند کیا؟ تو انہوں نے کہا ’نہیں، بلکہ آصف علی زرداری نے خود محمود کی وفاداری، اخلاق اور شرافت سے متاثر ہوکر چوہدری یونس سے ان کے بیٹے کا رشتہ بختاور بھٹو زرداری سے کرنے کی پیش کش کی تھی جو انہوں نے بخوشی قبول کی۔‘ انہوں نے انکشاف کیا کہ یہ رشتہ کافی پہلے طے ہوچکا ہے، منگنی کی باقاعدہ رسم اب رکھی جا رہی ہے۔ منگنی کی تقریب 27 نومبر کو بلاول ہاؤس کراچی میں ہو گی جب کہ شادی کی تقریب دو ماہ بعد 29 جنوری کو کراچی میں منعقد ہوگی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!
Close