امریکی کانگریس میں پاکستانی خواتین کے لیے ملالہ یوسفزئی سکالر شپ ایکٹ منظور

امریکی کانگریس نے ملالہ یوسفزئی سکالر شپ ایکٹ پاس کیا ہے جس کے تحت پاکستانی خواتین کے لیے سکالر شپ کی تعداد میں اضافہ ہو جائے گا۔
امریکی کانگریس کی ویب سائٹ کے مطابق بل میں یوایس ایڈ کی انتظامیہ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ پروگرام کے تحت 50 فیصد سکالر شپ پاکستانی خواتین کو دینے کی ہر ممکن کوشش کریں۔
اس بل میں یو ایس ایڈ سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ پاکستان میں تعلیمی پروگراموں کو بہتر بنانے اور وسعت دینے کے لیے امریکہ میں مقیم پاکستانیوں سے مشورہ کرے اور ان کی سرمایہ کاری سے فائدہ اٹھائے۔مریکی ایوان نمائندگان نے یہ بل گذشتہ برس مارچ 2020 میں منظور کر لیا تھا جسے اب یکم جنوری کو سینیٹ سے حتمی منظوری ملی ہے۔ اس بل کو اب وائٹ ہاؤس بھیجا جائے گا جہاں صدر کے دستخط کے بعد یہ باقاعدہ قانون کی شکل اختیار کر لے گا۔
گذشتہ برس جون میں ملالہ یوسف زئی نے آکسفرڈ یونیورسٹی سے اپنی گریجویشن کی تعلیم مکمل کرلی تھی جس پر ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب نے ٹوئٹر پر انہیں مبارکباد دیتے ہوئے ایک ویڈیو جاری کیا تھا۔اس ویڈیو میں ملالہ یوسفزئی یہ پیغام دیا تھا کہ ‘آپ نے تعلیم حاصل کی ہے اور اب یہ وقت ہے کہ آپ باہر نکل کر اسے دنیا کی بہتری کے لیے استعمال میں لائیں۔’

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

گوگلیٰ انگلش»
error: Content is protected !!
Close