مسلسل تین ماہ شکاگو ایئرپورٹ پر رہنے والا شخص گرفتار

شکاگو کے ایئرپورٹ میں مسلسل تین ماہ سے رہنے والے شخص کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے لیکن اس شخص کا مؤقف ہے کہ وہ مجبوراً ایئرپورٹ پر رہ رہا تھا کیونکہ وہ ’کووڈ‘ کی وبا کی باعث گھرجانے سے خوفزدہ تھا۔
33 سالہ ادتیہ اودھے سنگھ کو شکاگو کے اوہیئرایئرپورٹ سے گرفتار کیا گیا ہے۔ اگرچہ وہ تین ماہ سے یہاں مقیم تھا لیکن اسےہوائی اڈے کے ممنوعہ حساس علاقے میں رہنے اور 500 ڈالر سے کچھ کم رقم چرانے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ شکاگو پولیس نے اس کی گرفتاری کی تصدیق بھی کردی ہے۔ ہفتے کو اودھے سنگھ عدالت میں پیش ہوئے ،جہاں عدالت کو بتایا گیا کہ وہ 19 اکتوبر کو لاس اینجلس سے شکاگو اترا تھا اور وہ خاص سکیورٹی زون میں رہ رہا تھا کہ 16 جنوری کو گرفتار کرلیا گیا۔ ممنوعہ علاقے میں موجود پاکر ایئرپورٹ عملے نے اس سے شناخت طلب کی تو اس نے کسی دوسرے مینیجر آپریشن کا کارڈ دکھایا جو اس سے گم ہوچکا تھا۔
ریاستی وکیل کیتھلین ہاگرٹی نے کہا کہ ’وہ گھر جانے سے خوفزدہ تھا کیوں کہ اسے کورونا وائرس سے وحشت تھی اور بعض مسافر اسے کھانے پینے کا سامان دیتے رہے۔‘ تاہم اس پر چند سو ڈالر کی رقم چرانے اور ممنوعہ علاقے میں رہنے کا الزام ہے۔ عدالت نے 1000 ڈالر کے بدلے ضمانت پر رہا کردیا ہے لیکن اسے 27 جنوری کو پیشی پر طلب کیا ہے۔ اب تک اس کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ نہیں مل سکا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

گوگلیٰ انگلش»
error: Content is protected !!
Close