حریم کہتی ہے مفتی قوی کو تھپڑ مارنے سے پہلے جوتے بھی مارے


ماضی میں پاکستان کی پہلی ٹک ٹاک سٹار قندیل بلوچ کے ساتھ پینگیں بڑھانے اور پھر اس کے مقدمہ قتل میں نامزد ہو کر شہرت حاصل کرنے والے نام نہاد عالم دین مفتی عبد القوی اب ایک خاتون کا تھپڑ کھانے کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد دوبارہ خبروں میں ہیں۔
معروف ٹاک اسٹار حریم شاہ کا کہنا ہے کہ مفتی عبدالقوی نے ان کے ساتھ زبردستی کرنے کی کوشش کی تھی جس پر مشتعل ہو کر انہوں نے جوتوں سے مفتی کی پٹائی کی اور بعد ازاں ان کی سیکریٹری نے بھی عبدالقوی کو تھپڑ رسید کیا جس کی ویڈیو اب سوشل میڈیا پر وائرل ہے۔ دوسری طرف مفتی عبدالقوی کا کہنا ہے کہ وہ اپنے کمرے میں بستر پر بیٹھے تھے جب اچانک دروازہ کھلا اور حریم شاہ اور ان کی سیکرٹری نے اندر داخل ہو کر ان پر تشدد کیا۔ مفتی کا کہنا تھا کہ اس واقعے سے ثابت ہوا کہ سانپ سانپ ہی ہوتا ہے اس سے جتنی بھی دوستی کر لو وہ ڈستا ضرور ہے۔ تاہم میں اپنا معاملہ اللہ پر چھوڑتا ہوں۔
دوسری طرف حریم شاہ نے رویت ہلال کمیٹی کے سابق رکن مفتی عبدالقوی کو تھپڑ مارنے کی ویڈیو وائرل کرنے کے بعد ان کے ساتھ ڈریسنگ روم میں بنائی گئی مزید دو ویڈیوز بھی شیئر کردیں۔ حریم شاہ نے گزشتہ روز مفتی قوی کو ڈریسنگ روم میں تھپڑ مارنے کی مختصر ویڈیو شیئر کی تھی، جو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی۔ بعد ازاں حریم شاہ نے مفتی قوی کو تھپڑ مارنے کے حوالے سے نجی ٹی وی سے گفتگو کے دوران دعویٰ کیا تھا کہ مفتی قوی نے ان کے ساتھ انتہائی نازيبا، گھٹیا اور فحش گفتگو کی جو انہوں نے ریکارڈ کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ مفتی قوی دو روز سے غلط قسم کی حرکتیں کررہے تھے، جس وجہ سے ان کے صبر کا پيمانہ لبريز ہوگيا تو انہوں نے اپنی دوست کے ساتھ مل کر مفتی قوی کو تھپڑ رسید کیا۔ اسی حوالے سے مفتی قوی نے بھی اسی پروگرام میں بات کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ وہ خاموشی سے بیٹھے تھے کہ حریم شاہ نے آکر انہیں تھپڑ مارا۔ مختصر ویڈیو میں بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ مفتی قوی فون پر کچھ دیکھ رہے تھے کہ اس دوران حریم شاہ نے جاکر انہیں تھپڑ رسید کیا۔ مذکورہ تنازع کے بعد حریم شاہ نے مفتی قوی کی مزید دو ویڈیوز انسٹاگرام پر شیئر کیں، جن میں سے ایک ویڈیو میں وہ بڑے خوش انداز میں مفتی قوی کے ساتھ ڈریسنگ روم میں واک کرتی دکھائی دے رہی ہیں اور پس پردہ ایک گانا چلتا ہوا سنائی دیتا ہے۔
دوسری ویڈیو میں وہ مفتی قوی کے ساتھ گفتگو کرتی دکھائی دیں اور ساتھ ہی وہ اپنی فون سے انکی ویڈیو بھی ریکارڈ کرتی دکھائی دیں، تاہم مذکورہ ویڈیو سے صاف معلوم ہوتا ہے کہ کوئی تیسرا شخص ان کی ویڈیو بنا رہا ہے۔ مذکورہ ویڈیو میں مفتی قوی اپنی تعلیم کے حوالے سے بات کرتے دکھائی دیے، تاہم حریم شاہ نے انہیں بتایا کہ کہا جاتاہے کہ ابلیس کے پاس سب سے زیادہ معلومات تھی۔ مذکورہ مختصر ویڈیو میں حریم شاہ انگلیوں سے مفتی قوی کی جانب اشارے کرتے ہوئے بتاتی دکھائی دیتی ہیں کہ شیطان مت بنیں، ابلیس مت بنیں، منافق مت بنیں اور مذہب کا مذاق مت بنائیں۔ حریم شاہ کی جانب سے شیئر کی گئی دونوں ویڈیوز جلد ہی وائرل ہوگئیں اور سوشل میڈیا پر لوگ ان پر طرح طرح کے تبصرے کرنے لگے۔
حریم شاہ کی جانب سے ویڈیوز شیئر کیے جانے کے علاوہ بھی سوشل میڈیا پر مفتی قوی کی ٹک ٹاک اسٹار کے ساتھ کھانا کھانے کی ایک ویڈیو بھی وائرل ہو رہی ہے، جس میں وہ حریم شاہ اور ان کی ایک سہیلی کے ساتھ مختلف موضوعات پر بات کرتے دکھائی دے رہے ہیں۔ ویڈیو میں اگرچہ حریم شاہ کی آواز صاف سنائی دیتی ہے، تاہم ان کا چہرہ صرف دو بار دکھائی دیا۔ البتہ مفتی قوی کا چہرہ صاف دکھائی دیتا ہے۔ ویڈیو سے اندازہ ہوتا ہے کہ مذکورہ ویڈیو کو خفیہ طور پر ریکارڈ کیا گیا، جس میں حریم شاہ کے علاوہ بھی دیگر خواتین کی آواز سنائی دیتی ہے۔ اس ویڈیو میں مفتی عبدالقوی یہ دعوی کر رہے ہیں کہ ان کی ڈھیروں گرل فرینڈز ہیں اور وہ خواتین میں اتنی زیادہ مقبول ہیں کہ ہر عورت ان کی قربت حاصل کرنا چاہتی ہے۔ حریم شاہ اور ان کی سہیلی سے گفتگو کے دوران مختلف سوالوں کا جواب دیتے ہوئے مفتی عبدالقوی یہ بھی تسلیم کرتے ہیں کہ وہ مشروب مغرب یعنی شراب استعمال کرتے ہیں اور دیگر نشے بھی کر لیتے ہیں۔
تاہم ان تینوں وڈیوز میں کہیں بھی مفتی عبدالقوی حریم شاہ کے ساتھ نہ تو کسی قسم کی فحش گفتگو کرتے سنائی دیتے ہیں اور نہ ہی دست درازی کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ تاہم حریم شاہ کا دعوی ہے کہ مفتی عبدالقوی کو جوتے اور تھپڑ ب مارے گئے جب انہوں نے ان کے ساتھ نازیبا حرکات کرنے کی کوشش کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

گوگلیٰ انگلش»
error: Content is protected !!
Close