ایپل نے آئی فون 14 کے 4 ورژن مارکیٹ کر دیے

موبائل فون بنانے والی دنیا کی سب سے بڑی اور معروف کمپنی ’’ایپل‘‘ نے آئی فون 14 کہ 4 ورژن فروخت کے لئے مارکیٹ میں پیش کر دئیے ہیں۔ ایپل نے رواں برس توقع کے برعکس آئی فون 14 کی قیمت زیادہ نہیں بڑھائی مگر پاکستان میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی گرتی قدر سے اب بھی ایپل فونز مہنگے ترین سمارٹ فونز سمجھے جاتے ہیں، کمپنی کی جانب سے کم فیچرز والا آئی فون 14 بھی دو سائز میں پیش کیا گیا ہے جبکہ ہائی اینڈ اور آئی فون 14 پرو کے بھی دو سائز متعارف کروائے گئے ہیں۔
ایپل کے مطابق امریکہ میں آئی فون 14 کی کم سے کم قیمت 799 ڈالر اور آئی فون 14 پلس کی قیمت 899 ڈالر ہوگی جبکہ قدرے بہتر فیچرز سے لیس آئی فون 14 پرو کی قیمت 999 ڈالر اور اسی کی بڑی سکرین والے ماڈل آئی فون پرو میکس کی قیمت 1099 ڈالر ہوگی۔
اس حوالے سے وزارت خزانہ، پی ٹی اے اور مقامی تاجران سے بات کر کے آئی فون 14 کے مختلف ماڈلز کی پاکستان میں متوقع قیمت کا اندازہ لگانے کی کوشش کی ہے، اسلام آباد میں ایپل کمپنی سے منسلک تاجر اظہر عباسی کے مطابق ایپل کا سب سے ہائی اینڈ فون یعنی آئی فون 14 پرو میکس پاکستان میں تقریبا پانچ لاکھ کا ملے گا۔
موبائل فونز کے کاروبار سے وابستہ تاجر عمر احمد کے مطابق توقع ہے کہ 20 ستمبر کے بعد آئی فون 14 پاکستان میں دستیاب ہوگا، تاہم اس کی قیمت ابتدائی دنوں میں ڈالرز میں امریکی قیمت سے تقریباً ایک لاکھ پاکستانی روپے زیادہ ہوگی جبکہ پی ٹی اے کی جانب سے وصول کیا جانے والا ایک لاکھ 32 ہزار کا ٹیکس علیحدہ ہوگا۔
آئی فون کی قیمت میں اضافی ایک لاکھ روپے گاڑی کے اون کی طرح پہلے پانے کی قیمت ہے جو چند دنوں میں پانچ ہزار فی یوم کے حساب سے کم ہوتی جائے گی اور بالآخر تین چار ماہ میں یہ اضافی لاکھ روپے کم ہوتے ہوتے 10 ہزار روپے تک رہ جائے گے۔ اس طرح فون کی قیمت 90 ہزار روپے تک کم ہو جاتی ہے۔

افغان حکومت کامسعود اظہرکی افغانستان میں موجودگی سے انکار

تاہم عمر احمد کا کہنا تھا کہ ایف بی آر کا پی ٹی اے کے ذریعے لگایا جانے والا آئی فون ٹیکس اب تقریباً ایک لاکھ 32 ہزار روپے ہے جبکہ پاسپورٹ پر خود باہر سے موبائل لانے والوں سے پی ٹی اے تقریباً ایک لاکھ آٹھ ہزار ٹیکس وصول کرتا ہے۔ یاد رہے کہ ایف بی آر کی ویب سائٹ کے مطابق 500 امریکی ڈالر سے زائد مالیت کے فون پر 37 ہزار روپے فکس ٹیکس کے علاوہ اس کی قیمت کا 17 فیصد بھی وصول کیا جاتا ہے۔ 8 ستمبر کے سرکاری ڈالر ریٹ کے حساب سے آئی فون 14 کی پاکستان میں ابتدائی قیمت تقریبا چار لاکھ 15 ہزار تک ہوگی جبکہ آئی فون 14 پلس کی قیمت چار لاکھ 34 ہزار ہوگی، اس طرح آئی فون 14 پرو کی قیمت چار لاکھ 55 ہزار جبکہ آئی فون پرو میکس کی قیمت چار لاکھ 80 ہزار روپے کے قریب ہوگی۔
واضح رہے کہ ڈالر ریٹ کے بڑھنے سے اس قیمت میں مزید اضافہ ہوگا جبکہ دن گزرنے کے ساتھ اضافی وصول کی جانے والی ایک لاکھ روپے کی رقم میں کمی ہوتی جائے گی، گویا ہر فون کی قیمت پاکستانی مارکیٹ میں اس سال دسمبر تک 90 ہزار کم ہو جائے گی بشرطیکہ ڈالر کی قیمت مزید نہ بڑھے جو بظاہر مشکل لگ رہا ہے۔
اردو نیوز سے بات کرتے ہوئے وزیراعظم کے کوآرڈنیٹر برائے معیشت و توانائی بلال کیانی نے کہا ہے کہ پاکستان میں آئی فون سمیت دیگر فونز کی امپورٹ پر پابندی 22 اگست کو ہٹا لی گئی تھی تاہم اس پر ریگولیٹری ڈیوٹی بڑھا دی گئی تھی، ان کی طرف سے فراہم کی جانے والی نئی فہرست کے مطابق 500 ڈالر سے زائد مالیت کے فونز پر ریگولیٹری ڈیوٹی پہلے 22 ہزار ہوتی تھی مگر گزشتہ ماہ اس میں اضافہ کر کے اسے 44 ہزار روپے کر دیا گیا ہے۔ اس سے قبل امپورٹ پر پابندی ختم کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے مطالبے پر امپورٹ پر پابندی تو ختم کی جا رہی ہے تاہم ریگولیٹری ڈیوٹیز کو اتنا بڑھایا جائے گا کہ امپورٹ کی حوصلہ شکنی ہوتا کہ ملک میں ڈالر کی کمی سے ہونے والا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہو سکے۔

Related Articles

Back to top button