کیا کیٹ مڈلٹن کا شہزادی ڈیانا سے موازنہ کرنا جائز ہے؟


برطانوی میڈیا کی جانب سے نئی پرنسس آف ویلز شہزادہ ولیم کی اہلیہ کیتھرین مڈلٹن کا موازنہ آنجہانی شہزادی ڈیانا سے کرنے پر ڈیانا کے پرستاروں نے اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ موازنہ کرنا بنتا ہی نہیں۔ برطانوی میڈیا میں ایک اور بحث یہ چل رہی ہے کہ آیا کیٹ شہزادی ڈیانا کی لافانی میراث کو جاری رکھ پائیں گی جو آج بھی لوگوں کے دلوں پر راج کرتی ہے۔

یاد رہے کہ 70 سال تک تاج سر پر سجائے رکھنے والی ملکہ الزبتھ دوم کی موت کے بعد برطانیہ ایک نئے دورمیں داخل ہو گیا ہے۔ لیکن چارلس کا بادشاہ بن جانا ایک اورعلامتی تبدیلی بھی ساتھ لایا ہے یعنی 25 سال قبل ڈیانا کی موت کے بعد پہلی پرنسس آف ویلز۔ ڈیانا سے پہلے میری آف ٹیک پرنسس آف ویلز تھیں۔ 1901 سے 1910 تک یہ اعزاز ان کے پاس رہا جب ان کے شوہر جارج پنجم برطانیہ کے بادشاہ بنے۔ برطانیہ کے بادشاہ یا ملکہ کی طرف سے پرنس آف ویلز کا خطاب ان کے سب سے بڑے بیٹے کو دیا جاتا ہے جو زندہ ہوں۔ چارلز کو 1958 میں نو سال کی عمر میں پرنس آف ویلز بنایا گیا تھا۔ انہوں نے بادشاہ کے طور پر اپنے پہلے روز 40 سالہ بیٹے ولیم کو یہ خطاب دیا۔ پرنس آف ویلز کی اہلیہ پرنسس آف ویلز بنتی ہیں۔

شہزادہ چارلس نے اپنی والدہ کی موت کے بعد کہا ہے کہ میں جانتا ہوں کہ ہمارے نئے پرنس اور پرنسس آف ویلز ہمارے قومی مکالمے کی حوصلہ افزائی اور رہنمائی اور پسماندہ افراد کو مرکزی مقام دینے میں معاونت جاری رکھیں گے جہاں انہیں ضروری مدد فراہم کی جا سکتی ہے۔2005میں چارلس کے ساتھ شادی کے بعد ان کی دوسری اہلیہ کمیلا کو پرنسس آف ویلز کا انداز اختیار کرنے کی اجازت دی گئی۔ لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا کیوں کہ یہ خطاب ڈیانا کے ساتھ بہت مضبوطی سے جڑا ہوا تھا۔

ڈیانا نے کمیلا پرکھلے عام الزام لگایا تھا کہ وہ ان کی چارلس کے ساتھ شادی شدہ زندگی میں تیسری شخصیت ہیں۔ یاد رہے کہ چارلس کی کمیلا پارکر سے ایک ٹیلی فون کال لیک ہو گئی تھی جس نے دونوں کے تعلقات کی نوعیت کو آشکار کر دیا تھا۔ یاد رہے کہ ڈیانا پوری دنیا میں قابل احترام شخصیت مانی جاتی ہیں۔ 31 اگست 1997 کو پیرس میں کار حادثے میں 36 سال کی عمر میں ڈیانا کی المناک موت نے انہیں وقت میں ایک جگہ منجمد کر دیا اور بہت سے لوگوں کے لیے ایک تقریباً مقدس شخصیت بن گئیں۔

2011 میں کیتھرین کی ولیم سے شادی سے بھی پہلے بھی سوالات کھڑے ہو گئے تھے کہ آیا ان کا موازنہ ڈیانا کے ساتھ کیا جا سکتا ہے جنکی منگنی کی انگوٹھی انہوں نے پہن رکھی ہے۔ شاہی خاندان میں شامل ہونے کے بعد سے کیٹ نے ڈھنگ کا انداز اختیار کیا اور خاندان کی اچھی تصویر پیش کی۔ شہزادہ جارج، لوئس اور شہزادی شارلٹ کی پرورش کے دوران انہوں نے خیراتی مصروفیات کے انتخاب میں احتیاط سے کام لیا۔ کہا جاتا ہے کہ کیتھرین بھی ڈیانا کی طرح باوقار اور خوبصورت ہیں۔ اس سال کے شروع میں ایک برطانوی سروے میں کیٹ کو 60 فیصد پسندیدگی کے ساتھ شاہی خاندان کی مقبول ترین شخصیت قرار دیا گیا تھا۔ انہیں یہ درجہ ملکہ کے بعد دیا گیا جن کی مقبولیت 75 فیصد تھی۔ ماہرین کا ماننا ہے کہ اب وہ شاہی خاندان کی اتنی مقبول شخصیت ہو سکتی ہیں جتنی کبھی ڈیانا ہوا کرتی تھیں۔

Related Articles

Back to top button