امارات اوراسرائیل کے مابین آزاد تجارتی معاہدہ طے پا گیا

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان ” فری ٹریڈ” کا معاہدہ طے پاگیا ہے، دونوں ممالک کی جانب سے معاہدے پر دستخط کر دیئے گئے ہیں۔

عالمی میڈیا کی رپورٹس کے مطابقاسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان تجارت کو فروغ دینے کے لیے فری ٹریڈ ڈیل طے پاگئی جس پر دونوں ممالک کے حکام نے دبئی میں دستخط کردیئے۔ یہ معاہدہ مہینوں پر مشتمل مذاکرات کے بعد طے پایا۔ایک تقریب میں آزاد تجارت کے معاہدے پر دستخط کی تصدیق متحدہ عرب امارات میں اسرائیل کے سفیر عامر ہائیک نے اپنی ٹوئٹ میں بھی کی۔ وہ پہلے ہی اس معاہدے کو خطے میں تجارتی فروغ کا سنگ میل قرار دے چکے ہیں۔اسی طرح اسرائیل میں متحدہ عرب امارات کے سفیر محمد الخجا نے کہا کہ یہ معاہدہ ایک بے مثال کامیابی ہے۔ دونوں ممالک کے تاجروں کو مارکیٹوں تک کم ٹیرف میں تیز تر رسائی ملے گی جس سے دوطرفہ تجارت میں اضافہ ہوگا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امارات اوراسرائیل بزنس کونسل کے صدر ڈوریئن باراک نے کہا کہ تجارتی معاہدے میں ٹیکس کی شرح، درآمدات اور دانشورانہ املاک کی وضاحت کی گئی ہے، جس سے مزید اسرائیلی کمپنیوں کو متحدہ عرب امارات بالخصوص دبئی میں دفاتر قائم کرنے کی ترغیب ملے گی۔

عزت کا راستہ یہی ہے منحرف رکن مستعفی ہو کر گھر جائے

خیال رہے کہ امریکا کی ثالثی میں 2020 کو متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کے ساتھ سفارتی اور تجارتی تعلقات بحال کرلیے تھے اور دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تجارت میں اضافہ ہوا ہے، اور یہ معاہدہ کسی بھی عرب ملک کے ساتھ اسرائیل کا پہلا بڑا تجارتی معاہدہ ہے۔

Related Articles

Back to top button