لیڈی ڈیانا موت سے پہلے امریکہ شفٹ ہونے والی تھیں

برطانیہ میں شائع ہونے والی ایک نئی کتاب میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ شہزادی ڈیانا اپنی موت سے چند ہفتے پہلے برطانیہ چھوڑ کر امریکا شفٹ ہونے کی منصوبہ بندی کر رہی تھیں۔ یہ دعویٰ شہزادی ڈیانا کے ایک سابق باڈی گارڈ نے اپنی سوانح حیات میں کیا۔ لی سان سم نے اپنی کتاب ‘ پروٹیکٹنگ ڈیانا: اے باڈی گارڈ سٹوری ‘ میں بتایا کہ جولائی 1997 میں اپنے بوائے فرینڈ دودی الفائد اور بیٹوں کے ساتھ تعطیلات مناتے ہوئے شہزادی ڈیانا نے امریکا منتقل ہونے کے منصوبے کے بارے میں بتایا تاکہ انہیں میڈیا سے تحفظ مل سکے۔

کتاب میں بتایا گیا ہے کہ میڈیا شہزادی کی زندگی کے ہر پہلو میں مداخلت کر رہا تھا لہذا انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں میرے کرنے کے لیے کچھ نہیں رہا، میں جو بھی کروں اخبارات نے مجھ پر حملے کرنے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس لیے میں امریکا منتقل ہوکر باقی زندگی وہاں گزارنا چاہتی ہوں تاکہ یہاں کے معاملات سے دور رہ سکوں، انہوں نے کہا کہ کم از کم امریکا میں لوگ مجھے چاہتے ہیں اور مجھے اکیلا چھوڑ دیں گے۔ کتاب میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ لیڈی ڈیانا اپنے بیٹوں کے بغیر امریکا منتقل ہونا چاہتی تھیں۔ اپنے باڈی گارڈ کے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ وہ کبھی اپنے بیٹوں کو شاہی ذمہ داریوں سے سبکدوش ہونے کی اجازت نہیں دیں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ ممکنہ طور پر اپنے بیٹوں سے اسکولوں کی تعطیلات کے دوران ملا کریں گی۔ کتاب کے مطابق شہزادی ڈیانا کو اپنے بیٹوں کو میڈیا کی وجہ سے چھوڑ کر جانا چاہتی تھیں جو انکی زندگی کے ہر پل میں مداخلت کر رہا تھا۔ کتاب کے مطابق شہزادی ایک دن اس بارے میں میڈیا سے بات کرنے بھی گئی تھیں مگر پھر آخری لمحے انہوں نے امریکا منتقل ہونے کی بات نہیں کی۔

برطانوی شہزادی لیڈٰی ڈیانا اپنی حادثاتی موت کے 25 برس بعد بھی لوگوں کے دلوں میں عوامی شہزادی کے طور پر زندہ ہیں۔ یاد رہے کہ لیڈی ڈیانا یکم جولائی 1961 کو انگلینڈ میں پیدا ہوئیں، اور 31 اگست 1997 کو پیرس میں ایک کار حادثے میں اپنے بوائے فرینڈ دودی الفائد کے ساتھ جاں بحق ہو گئی تھیں۔اس سے پہلے 24 فروری 1981 کو شہزادہ چارلس اور لیڈی ڈیانا نے بکنگھم پیلس میں اپنی منگنی کا اعلان کیا تھا۔ اس وقت اس پر 30 ہزار پاؤنڈز کی لاگت آئی جو آج کے کرنسی ریٹ کے مطابق 36 ہزار ڈالر بنتے ہیں۔ ان کی انگوٹھی پر نیلم کے پتھر کے گرد 14 قیمتی ہیرے لگے ہوئے تھے۔ اس کے بعد سے یہ انگوٹھی کافی مشہور ہوئی ہے۔ اب اسے ڈچز آف کیمبرج کیتھرین پہنتی ہیں۔

29 جولائی 1981 کو لیڈی ڈیانا اور شہزادہ چارلس کی شادی ہوئی جسے ’صدی کی سب سے بڑی شادی‘ کہا گیا۔ یہ تقریب ٹی وی پر نشر کی گئی اور دنیا بھر میں لاکھوں لوگوں نے اسے دیکھا۔ ڈیانا کی عمر بس 20 سال تھی۔شادی کے ایک سال بعد 21 جون 1982 کو ان کے گھر شہزادہ ولیم کی پیدائش ہوئی جو شہزادہ چارلس کے بعد تخت کے لیے دوسرے نمبر پر ہیں۔ 1984 میں 15

میگھن مارکل شاہی خاندان کو معاف کرنے کو کیوں تیار نہیں؟

ستمبر کو ولیم کے بھائی کی ولادت ہوئی، ان کا نام ہنری رکھا گیا مگر انھیں شہزادہ ہیری کے نام سے جانا جاتا ہے۔

دوسری جانب ڈیانا کی شہرت بڑھتی چلی گئی، وہ فیشن کی علامت بن گئیں۔ ان کے کپڑے لوگوں کی توجہ کا مرکز بنے رہتے تھے، کسی سرکاری تقریب میں شرکت کے موقع پر ان کی امدادی سرگرمیوں کو سراہا جاتا اور دنیا بھر میں اس کی سرخیاں بنتیں۔ لیڈی ڈیانا نے امداد جمع کرنے میں اہم کردار ادا کیا اور معروف شخصیات کی جانب سے امدادی سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کو عام بنا دیا، ایڈز کے مریضوں سے محض ہاتھ ملانے جیسے معمولی کام کر کے ثابت کیا کہ عوامی سطح پر روابط قائم کرنا کوئی خطرناک بات نہیں۔

ویلز کے شہزادے اور شہزادی نے ایک ساتھ کئی غیر ملکی دورے کیے تاہم 1980 کی دہائی کے اواخر میں یہ سب کو معلوم ہوچکا تھا کہ ان کی زندگیاں الگ ہیں۔ 1992 میں انڈیا کے سرکاری دورے کے موقع پر ڈیانا ’محبت کی علامت‘ سمجھے جانے والے تاج محل کے سامنے تنہا بیٹھی تھیں۔ علیحدگی کے کئی سال بعد ڈیانا اور چارلس کے درمیان 28 اگست 1996 کو باقاعدہ طلاق ہوئی۔ اگلے سال جون میں ڈیانا نے ان 79 کپڑوں کو نیلام کر دیا جو انھوں نے دنیا بھر کے میگزینز کے لیے پہنے تھے، اس نیلامی میں امدادی کاموں کے لیے 45 لاکھ ڈالر جمع ہوئے، یہ ان کی اپنے ماضی سے الگ ہونے کی بھی علامت تھی۔

جنوری 1997 میں شہزادی ڈیانا نے عالمی سطح پر سرخیاں بنائیں جب انھوں نے ہتھیاروں پر پابندی کا مطالبہ کیا، بارودی سرنگوں کے خلاف مہم کیلئے قائم کردہ مائنز ایڈوائزری گروپ کے شریک بانی لو مگراتھ ڈیانا کے ساتھ کام کرتے تھے۔31 اگست 1997 کو ارب پتی کاروباری شخصیت محمد الفاید کے بیٹے دودی الفاید کے ساتھ پیرس میں رات کے کھانے کے بعد یہ جوڑا ایک لیموزین میں ریستوران سے نکلا۔ کچھ فوٹوگرافرز موٹر بائیکس پر ان کا پیچھا کر رہے تھے تاکہ شہزادی کے نئے دوست کی تصاویر بنا سکیں، اسی دوران شہزادی ڈیانا کی کار کو ایک انڈرپاس پر حادثہ پیش آ گیا جس میں ان کی موت واقع ہوگئی۔

Related Articles

Back to top button