خفیہ ہیکر کا عمران اور بشریٰ بی بی کو بے نقاب کرنے کا اعلان


وزیراعظم شہباز شریف کی آڈیو ریکارڈنگز لیک ہونے کے بعد شروع ہونے والی لیکس کی جنگ میں تیزی آ گئی ہے اور پی ٹی آئی مخالف ہیکر نے عمران خان کی ریکارڈنگز کی تیسری قسط جاری کرنے کا اعلان کر دیا ہے جس میں سب سے زیادہ آڈیوز بشری ٰبی بی کی ہیں۔ یاد رہے کہ اس سے پہلے ہیکر نے عمران کی سائفر بارے دو آڈیوز لیک کی تھیں جن سے انکشاف ہوا تھا کہ انہوں نے اپنی حکومت کے خلاف امریکی سازش کا بیانیہ گھڑا تھا اور اس میں کوئی حقیقت نہیں تھی۔

ہیکر نامی اکاؤنٹ سے جاری ہونے والی ٹوئیٹس کی ایک سیریز میں ہیکر نے دعوی ٰکیا ہے کہ اس کے پاس وزیراعظم عمران خان کے کرتوتوں کا ایک خزانہ موجود ہے جو وہ آڈیوز اور دستاویزات کی صورت میں لیک کرنے جا رہا ہے۔ ہیکر نے سابق وزیراعظم اور انکی اہلیہ بشریٰ بی بی پر سنگین الزامات عائد کیے ہیں۔ ہیکر نے اپنی ٹویٹس میں بتایا ہے کہ بشریٰ بی بی آرمی چیف جنرل قمر باجوہ پر جادو ٹونہ کرتے ہوئے پکڑی گئی تھیں۔ اس کے علاوہ یہ دعویٰ بھی کیا گیا ہے کہ بشریٰ بی بی نے عمران خان کو مشورہ دیا تھا کہ پرویز الٰہی کی دوسری شادی میری ایک مریدنی سے کروا دی جائے تاکہ وہ مکمل طور پر ہمارے قابو میں آ جائے۔ بشریٰ بی بی کے حوالے سے یہ الزام بھی عائد کیا گیا ہے کہ وہ اپنی سہیلی فرح گوگی کے ساتھ مل کر عمران خان کے خلاف گفتگو کرتی تھیں اور ان کو گالیاں بھی دیا کرتی تھیں۔

ہیکر نے اپنی ٹویٹس میں لکھا ہے کہ جن کو لگتا ہے کہ نازیبا ویڈیوز میں عمران خان اوپر ہیں انہیں شدید مایوسی ہو گی، کیونکہ خان صاحب کو اتنے گندے شوق ہیں کہ سوچا بھی نہیں جا سکتا۔ ہیکر نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کو عمران خان نے قتل کروایا۔ ہیکر کے مطابق خان صاحب اور عامر لیاقت کی دوسری بیوی ہانیہ کے خفیہ تعلقات تھے اور اسی نے عمران کو اپنے شوہر کی ننگی ویڈیو بھجوائی تھی جس کے لیک ہونے کے بعد عامر لیاقت شدید ذہنی دباؤ میں آگئے اور پھر اچانک ایک دن گھر سے ان کی لاش برآمد ہوئی۔ ہیکر کا دعویٰ ہے کہ عامر لیاقت کی موت قدرتی نہیں تھی بلکہ انہیں عمران نے قتل کروایا کیونکہ وہ ان سے بغاوت کرکے اپوزیشن کے ساتھ مل گئے تھے۔ ہیکر نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے عامر لیاقت کے قتل میں عمران خان کے ملوث ہونے کے پکے شواہد ایجنسیوں تک پہنچا دیئے ہیں، اور ضرورت پڑنے پر انہیں عوام سے بھی شئیر کیا جائے گا۔

تاہم بشریٰ بی بی کے حوالے سے ہیکر نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ عمران نے انہیں تھپڑ مار کر وزیراعظم ہاؤس سے نکال دیا تھا جس کے بعد وہ کچھ مہینے لاہور میں اپنی سہیلی فرح گوگی کے گھر رہائش پذیر رہیں۔ بشریٰ کو دوبارہ وزیراعظم ہاؤس میں داخلے کی اجازت نہیں تھی، اور بات طلاق تک جا پہنچی تھی۔ ہیکر نے دعویٰ کیا کہ سابق ڈی جی ایف آئی بشیر میمن کو عمران خان کا حکم نہ ماننے پر ایک روز وزیر اعظم ہاؤس کے باتھ روم میں بند کر دیا گیا تھا۔ اس کے بعد انہیں عمران کی بات منوانے کیلئے دھمکیاں بھی دی گئیں۔

ہیکر نے اپنی ٹویٹس میں کہا ہے کہ وہ دنیا کو بتائے گا کہ فرح گوگی پرائم منسٹر ہاؤس میں کیا کرتی تھی اور بشریٰ بی بی کے ساتھ مل کر عمران کو گالیاں کیوں دی جاتی تھیں؟ ہیکر نے فرح گوگی کی عمران بارے آڈیو جلد ریلیز کرنیکا وعدہ کیا ہے۔ہیکر نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان نے پاکستان کے دورے کے دوران سعودی شہزادہ محمد بن سلمان کو شراب کی آفر کے علاوہ مساج کے لئے لڑکیاں فراہم کرنے کی آفر بھی کی تھی، جس پر وہ ناراض ہوگئے تھے۔

ہیکر نے دعویٰ کیا کہ بشرٰی بی بی عمران خان کے عقد میں جانے کے باوجود اپنے پہلے شوہر خاور مانیکا کو ٹیلی فون پر ہدایات دیتی تھیں، ایک روز بشریٰ نے خاور مانیکا سے کہا کہ سینئر پولیس افسر کو اپنے ڈیرے پر لے جا کر مرغا بناؤ، اسکی یہ جرات کے ہماری فیملی کی طرف آنکھ اٹھا کر بھی دیکھے۔

ہیکر نے دعوی ٰکیا کہ سابقہ خاتون اول نے عمران خان کے ساتھ شادی سے پہلے ایک اور بڑے سیاستدان کو شادی کا پیغام بھیجا تھا مگر اس نے یہ کہہ کر انکار کر دیا کہ ہم پیری فقیری کو پسند نہیں کرتے اور نہ ہی ہم چاہتے ہیں ہماری خاطر کوئی عورت اپنے شوہر سے طلاق لے۔ مریم نواز کی جیل میں قید سے متعلق بھی ہیکر نے تہلکہ خیز انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ مریم کو بلیک میل کرنے کیلئے ان کے باتھ روم میں کیمرے بشریٰ بی بی کے حکم پر لگائے گئے، بشریٰ نے عمران کو کہاکہ مریم نواز کے باتھ روم میں کیمرے لگائے جائیں تاکہ ضرورت پر ہم اس کو بلیک میل کر سکیں۔ اس کے علاوہ ایک روز بشریٰ بی بی نے عمران سے یہ بھی کہا کہ نواز شریف کو جیل سے زندہ باہر نہیں آنا چاہیے بلکہ ان کی لاش ہی باہر آنی چاہیے۔

ہیکر نے انکشاف کیا کہ جن کو لگتا ہے نازیبا ویڈیوز میں عمران خان اوپر ہیں ان کو شدید مایوسی ہوگی، عمران خان کو اتنے گندے شوق ہیں کوئی سوچ بھی نہیں سکتا، عمران خان کی ویڈیوز پبلک کرنے کے قابل ہی نہیں۔ ہیکر نے یہ بھی بتایا ہے کہ عمران خان بشریٰ بی بی کے کہنے پر پاکستانی عوام کو ماموں بنانے کے لیے مذہبی ٹچ دیتے رہے۔ ہیکر نے دعویٰ کیا کہ بشریٰ نے عمران کو کہا کہ عوام مذہب کے حوالے سے بہت جلد جذباتی ہوتے ہیں، آپ بھی علامہ خادم رضوی کی طرح عوام کے دینی جذبات کو کیش کریں۔

ہیکر نے دعویٰ کیا کہ عمران خان نے پنجاب میں حکومت تبدیل کرنے کی منصوبہ بندی کی، عمران کو 26 لوگوں کو ڈی سیٹ اور الیکشن لڑوانے کی یقین دہانی کرائی گئی، عمران خان کی اہلیہ نے پرویز الہیٰ کی شادی اپنی جوان مریدنی سے کرانے کا منصوبہ بنایا، اس طرح پرویز الٰہی ہمارے قبضے میں آجائے گا۔

ہیکر نے انکشاف کیا کہ سابق خاتون اوّل کا بیٹا عثمان وزیراعظم ہاؤس میں 15 دن رہا، یہ بھی دعویٰ کیا کہ بشریٰ بی بی کے بیٹے نے بہن کی شادی کیلئے سپیشل جہاز بھی مانگا، بشریٰ بی بی کے بیٹے نے عمران خان کو شادی میں سعودی عرب ساتھ لیجانے کی خواہش کی۔ ہیکر نے دعویٰ کیا کہ عمران خان ٹک ٹاکر حریم شاہ کو بھی قتل کروانا چاہتے تھے، ہیکر نے عمران خان کیخلاف حریم شاہ سے متعلق آڈیو موجود ہونے کا دعوی ٰبھی کر دیا۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ تمام دعوے کرنے کے بعد اپنا ٹوئیٹر اکاؤنٹ ڈیلیٹ کر دینے والا ہیکر خود کو سچا ثابت کرنے کے لیے آڈیوز اور وڈیوز کب سامنے لاتا ہے؟

Related Articles

Back to top button