کیا شجاعت سیاسی کیرئیر کا سب سے بڑا بلنڈر کر رہے ہیں؟


قاف لیگ کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین کی جانب سے وزیراعلیٰ پنجاب کے الیکشن میں حمزہ شہباز کی بجائے پرویز الہی کا ساتھ دینے کا اعلان ان کے خاندان کو تو راضی کر دے گا اور مونس الٰہی کی سیاست کو بھی جلا بخش دے گا، لیکن یہ فیصلہ خود شجاعت اور ان کے بیٹے سالک حسین کی سیاست کو مکمل داؤ پر لگا دے گا۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ چوہدری شجاعت کا یہ فیصلہ عقل و فہم سے عاری ہے کیونکہ اگر وہ مرکز میں وزیر اعظم شہباز شریف کے اتحادی ہیں اور ان کا بیٹا اور پارٹی سیکرٹری جنرل وفاقی وزیر ہیں تو پھر پنجاب میں حکومتی مخالفین کا وزیر اعلیٰ بنوانا ایک سیاسی بلنڈر کے سوا کچھ نہیں کیونکہ اس کے نتیجے میں وفاقی حکومت بھی ختم ہونے کا خدشہ ہے جس سے شجاعت کی چوہدراہٹ بھی ختم ہو جائے گی اور وہ بالآخر پرویز الٰہی اور ان کے ساتھیوں کے رحم وکرم پر ہونگے جو کہ عمران خان کے ساتھی ہیں۔ تجزیہ کار کہتے ہیں کہ بڑے چوہدری صاحب تو سیاسی بلنڈر کر ہی رہے ہیں لیکن پرویز الٰہی بھی عمران کے طفیلی بن کر سیاسی دانش کا مظاہرہ نہیں کر رہے کیونکہ بالآخر انہوں نے پرویز الٰہی کو بھی استعمال کرنے کے بعد انکا جھٹکا ہی کرنا ہے جیسا کہ انہوں نے اپنے ہر محسن کے ساتھ کیا ہے۔

اہم ترین سوال یہ ہے کہ کیا عمران خان پرویز الٰہی کو وزیر اعلیٰ پنجاب بنوا کر شہباز کی وفاقی حکومت گرانے کے بعد اگلے سیاسی منظر نامے میں دوبارہ پرویز الہی کو وزیر اعلیٰ بنائیں گے؟تجزیہ کار اس سوال کا جواب “نہ” میں دیتے ہیں۔ عمران خان اقتدار میں رہتے ہوئے بھی اور اقتدار جانے کے بعد بھی قاف لیگ خصوصا پرویز الہی کو بلیک میل ہی قرار دیتے چلے آئے ہیں، ایسے میں اگلے سیاسی منظر نامے میں وہ کسی بھی صورت پی ٹی آئی کے علاوہ کسی اور پارٹی کے آدمی کو اپنا وزیر اعلی نہیں بنائیں گے۔ لہذا لگتا یوں ہے کہ شجاعت حسین اپنے نافرمان کزن پرویز الہی کو وزیر اعلی بنوا کر پہلے حمزہ اور پھر شہباز کی حکومت کا خاتمہ کروائیں گے اور پھر خود بھی سیاسی طور پر فارغ ہو جائیں گے۔ یعنی یہ کہا جائے تو بے جا نہ ہوگا کہ پرویز الہی کو وزیراعلی بنوا کر شجاعت نہ صرف وفاقی حکومت کی قبر کھودیں گے بلکہ اپنی سیاست کو بھی دفن کر دیں گے، اور وہ بھی بھی اپنے احسان فراموش کزن پرویز الہی کے لیے، جو آخری عمر میں اپنے بیٹے کے کہنے پر بڑے بھائی کو دغا دے کر عمران خان کو اپنا قائد اور رہبر تسلیم کر چکا ہے۔ ناقدین کہتے ہیں کہ پرویز الہی کا تو یہ آخری سیاسی معرکہ ہے لیکن ان کے بعد مونس الٰہی عمران خان کے ساتھ مل کر اپنی سیاست آگے بڑھاتا رہے گا، تاہم ایک بات طے ہے کہ شجاعت کے اپنے بیٹے سالک حسین کا سیاسی مستقبل تاریک ہو جائے گا، کیونکہ حمزہ کی جگہ پرویز کو وزیراعلی بنوا کر شجاعت نہ صرف آصف علی زرداری کو ناراض کریں گے بلکہ دیگر 12 اتحادی جماعتوں کے بھی ولن بن جائیں گے، ویسے بھی جب پرویز الہی نے پی ڈی ایم اتحاد کو کمٹمنٹ دینے کے باوجود دھوکا دیا تو اس معاملے میں شجاعت حسین ہی ضامن تھے، اس لیے انہیں ایک مرتبہ پھر سوچنا چاہیے اور عمران، پرویز اور مونس کی سیاست بچانے اور اپنی اور اپنے بیٹے کی سیاست ڈبونے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنی چاہیے۔

یاد رہے کہ پنجاب کے ضمنی انتخابات کے بعد پی ڈی ایم کی اتحادی جماعتوں نے حمزہ شہباز کو پنجاب کی وزارت اعلی پر برقرار رکھنے کا منصوبہ تیار کیا تھا جسکے تحت آصف زرداری نے قاف لیگ کے صدر شجاعت حسین کو درخواست کی تھی کہ وہ اپنے 10 ممبران پنجاب اسمبلی کو پرویز الہی کی بجائے حمزہ کے حق میں ووٹ ڈالنے کا حکم دیں۔ آصف زرداری نے شجاعت کو یاد دلایا تھا کہ ماضی میں جب پی ڈی ایم نے پرویز کو وزارت اعلیٰ کا امیدوار بنایا تھا تو وہ اس معاملے میں ضامن تھے لیکن پرویز الہی نے شجاعت کی ضمانت کے باوجود انہیں دھوکہ دیا اور عمران سے ہاتھ ملا لیا، اس لیے اب شجاعت کو بطور ضامن اپنے وعدے کا پاس کرتے ہوئے پی ڈی ایم کا ساتھ دینا چاہیے اور حمزہ شہباز کی حمایت کرنی چاہیے۔ چوہدری شجاعت کو یہ بھی بتایا گیا کہ اگر حمزہ کی وزارت اعلٰی جانے کے بعد وفاقی حکومت کا خاتمہ ہوتا ہے تو اس کی ذمہ داری بھی ان پر آئے گی۔ باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری نے چوہدری شجاعت کو ایک خط بھی تحریر کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پرویز الہی نے نہ صرف انہیں بلکہ 13 اتحادی جماعتوں کو دھوکا دیا تھا لہٰذا اگر اب شجاعت حسین اسی پرویز الہی کا ساتھ دیتے ہیں اور پنجاب میں پی ڈی ایم کی حکومت گرواتے ہیں تو پھر انکی پرویز الہی سے ذاتی دشمنی شروع ہو جائے گی جو دور تلک جائے گی۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ماضی قریب میں پرویز الہی اور انکے ساتھی ریڈ لائن کراس کرتے ہوئے اور تمام دید لحاظ بھلاتے ہوئے بد زبانی میں جس حد تک چودھری شجاعت کے خلاف چلے گئے تھے اس کے بعد ان کا پرویز الہی کی حمایت کرنا عقل و فہم سے عاری فیصلہ لگتا ہے جو چوہدری شجاعت کی سیاست کو ہمیشہ کے لئے دفن کر دے گا۔

Related Articles

Back to top button