مرضی کے صحافیوں کو بلانے پر عمران کو صحافیوں کا خط

پی ٹی آئی کی میڈیا کوریج کرنے والے 15 سے زائد سینئر صحافیوں نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو ان کی جماعت کے رویے کے خلاف ایک خط میں گلہ کیا ہے کہ ان کی پریس کانفرنسز میں صرف ان کی پسند کے صحافیوں کو بلایا جاتا ہے۔

فوج کی ضمنی الیکشن میں پولنگ سٹیشنز سے دور رہنے کی خواہش

خط میں لکھا گیا ہے کہ عمران سے سخت سوال پوچھنے والے اور تنقیدی سوچ رکھنے والے صحافیوں کو کوریج سے روکا جاتا ہے۔

خط میں لکھا گیا ہے کہ پی ٹی آئی میڈیا ٹیم کے رویے کے خلاف صحافی سراپا احتجاج ہیں اور اگر صرف پسندیدہ اور سلیکٹڈ صحافیوں کو ہی بلانا ہے تو عمران خان کے ویڈیو پیغامات کو پریس کانفرنس نہ کہا جائے۔ خط لکھنے والے صحافیوں نے کہا کہ اگر پی ٹی آئی نے رویہ نہ بدلا تو مستقبل میں تحریک انصاف کے ایونٹس کی میڈیا کوریج کا بائیکاٹ کریں گے۔

خط لکھنے والے صحافیوں کا موقف ہے کہ تحریک انصاف کو کور کرنے والے صحافیوں کی تعداد دو درجن سے زیادہ ہے مگر پریس کانفرنس میں تین سے چار مخصوص ٹی وی چینلز کے صحافیوں کو بلایا جاتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ عمران خان کو سخت سوالات سننے کی عادت نہیں اور وہ صرف اپنی مرضی کے سوالات کے جواب دینا چاہتے ہیں لہذا صرف مخصوص صحافیوں کو ہی انکی پریس کانفرنسز میں بلایا جاتا ہے۔

Related Articles

Back to top button