جامعہ کراچی کی خودکش بمبار خاتون ایم فل کی طالبہ نکلی

جامعہ کراچی میں خودکش دھماکہ کرنے والی خاتون ایم فل کی طالب علم نکلی، جوکہ چھ ماہ سے زیر تعلیم تھی، خاتون کی شناخت شیری کے نام سے ہوئی ہے۔
تفتیشی حکام کے مطابق خاتون حملہ آور 6 ماہ سے کراچی میں رہائش پذیر تھی، حملہ آور زولوجی ڈیپارٹمنٹ سے ایم فل کر رہی تھی جبکہ خاتون حملہ آور کا شوہر اور بہن بھی ڈاکٹر ہیں۔
خاتون حملہ آور کے خاندان کے دیگر افراد بھی اعلیٰ تعلیم یافتہ ہیں، مبینہ خاتون خودکش بمبار کے والد حال ہی میں بلوچستان سے گریڈ 20 میں ریٹائر ہوئے اور اب تک خاتون خودکش حملہ آور کے خاندان کا کوئی کرمنل ریکارڈ نہیں ملا، تفتیشی حکام کے مطابق ممکنہ طور پر خاتون خودکش بمبار نے یونیورسٹی آنے کیلئے رکشے کا استعمال کیا۔
واضح رہے کہ گزشتہ روز کراچی یونیورسٹی مین ہونے والے دھماکے میں دھماکے سے 4 افراد جاں بحق اور کئی زخمی ہوگئے تھے ، یہ دھماکہ اس وقت ہوا جب جامعہ کراچی میں چینی زبان کی تعلیم دینے والے کنفیوشس انسٹی ٹیوٹ کے گیٹ پر خاتون بمبار نے عین اس وقت خود کو دھماکے سے اڑایا جب چینی اساتذہ کی وین اندر داخل ہونے والی تھی۔

Related Articles

Back to top button