سنتھیا کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے وزارت داخلہ کو درخواست

سابق وزرائے اعظم بینظیر بھٹو، یوسف رضاگیلانی اور پیپلز پارٹی کے دیگر سابق وزراء کے خلاف ٹوئٹ اور الزامات لگانے والی امریکی خاتون سنتھیا رچی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالنے کی درخواست وزارت داخلہ کو موصول ہوگئی ہے۔
سنتھیا رچی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی درخواست سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے چیئرمین سینیٹر رحمان ملک کی جانب سے دی گئی ہے۔رحمان ملک کے مطالبے پر داخلہ کمیٹی کے ڈائریکٹر تنویراحمد نے سیکرٹری داخلہ کو خط میں کہا ہے کہ سنتھیا رچی کے خلاف بینظیربھٹو کی توہین اور دیگر امور عدالتوں میں ہیں، اس لیے ان کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے۔
خیال رہے کہ امریکی خاتون نے سابق وزیرداخلہ رحمان ملک پر بھی جنسی زیادتی کا الزام عائد کیا ہے جس پر رحمان ملک کی جانب سے انہیں 50 کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھی بھیجا گیا ہے۔
دوسر ی جانب اسلام آباد کی سیشن کورٹ نے سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو پر الزامات سے متعلق بیان پر امریکی شہری سنتھیا رچی کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر سنتھیا رچی کو نوٹس جاری کر دیا ہے تاہم مشکوک امریکی خاتون سنتھیا رچی کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی سمجھتی ہے کہ مجھے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد دھمکیاں دے کر خاموش کرادیں گے۔
سنتھیا کا کہنا تھا کہ اتنے برسوں میں پیپلزپارٹی کے خلاف اس سے کہیں زیادہ ثبوت جمع کر لیے ہیں جو انصاف کے لیے درکار ہیں، ابھی تو انہوں نے صرف شروعات کی ہے۔ سنتھیا رچی کا مزید کہنا تھا کہ سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے ویزے کا مسئلہ حل کرانے کا کہہ کر ڈرائیور بھیج کر اپنے پاس بلایا، گلدستہ اور قیمتی تحفہ دینے کے بعد نشہ آور مشروب پلایا اور اس کے بعد زیادتی کا نشانہ بنایا۔سنتھیا رچی نے الزام لگایا کہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے ان سے نامناسب طریقے سے گلے ملنے کی کوشش کی جب کہ مخدوم شہاب الدین نے کندھے پر مساج کرنے کی کوشش کی۔
حال ہی میں امریکی شہری سنتھیا رچی نے سوشل میڈیا پر پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے خلاف الزامات کی بوچھاڑکی تھی۔
انھوں نے سابق وزیر داخلہ رحمان ملک پر جنسی زیادتی جب کہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور سابق وفاقی وزیر مخدوم شہاب الدین پر دست درازی کا الزام عائد کیا تھا۔اس سے قبل سنتھیا رچی نے سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کے حوالے سے بھی متنازع اور نامناسب ٹوئٹ کی تھیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button