شزا فاطمہ وزیراعظم کی مشیر برائے امور نوجوان مقرر

ایم این اے شیزا فاطمہ کو وزیراعظم کی مشیر برائے امور نوجوان مقرر کر دیا گیا ہے، اس سلسلے میں حکومت کی جانب سے نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے، وزیراعظم کی جانب سے شزا فاطمہ کا بطور مشیر برائے امور نوجوان تقرر مذکورہ رولز کے شیڈول 5-اے کے سیریل نمبر ون-اے کے ساتھ پڑھے گئے رولز آف بزنس، 1973 کے قاعدہ 4 (6) کے مطابق کی گئی ہے۔
قومی اسمبلی کی ویب سائٹ کے مطابق وفاقی کابینہ مجموعی طور پر 45 اراکین پر مشتمل ہے جس میں 34 وفاقی وزرا، 5 وزرائے مملکت، 3 معاون خصوصی اور 3 مشیر شامل ہیں، وزیراعظم کی کابینہ میں شامل دیگر ارکان میں احسن اقبال کو وزارت منصوبہ بندی، سینیٹر اعظم نذیر تارڑ کو وزارت قانون و انصاف، رانا ثنا اللہ کو وزارت داخلہ، خواجہ سعد رفیق کو وزارت ریلوے اور مرتضیٰ جاوید عباسی کو پارلیمانی امور، بلاول بھٹو کو وزارت خارجہ اور سید امین الحق کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کی وزارت دی گئی ہے۔
سید خورشید شاہ کو آبی وسائل، نوید قمر کو تجارت، عبدالقادر پٹیل قومی صحت، شازیہ مری بینظیر انکم سپورٹ پروگرام، شیری رحمان موسمیاتی تبدیلی، سید مرتضیٰ محمد انڈسٹریز، ساجد طوری اوورسیز پاکستانیز، احسان مزاری بین الصوبائی رابطہ اور عابد بھائیو کو نجکاری کی وزارت کا قلمدان سونپا گیا ہے، شاہ زین بگٹی کو انسداد منشیات، مولانا اسعد محمود کو مواصلات، مولانا عبدالواسع کو وزرات ہاؤسنگ، مفتی عبدالشکور کو وزارت مذہبی امور، سینیٹر طلحہ محمود کو وزارت سیفران کا قلمدان دیا گیا ہے۔
وزیراعظم کے 5 وزرائے مملکت میں ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا کا وزیر مملکت برائے خزانہ، حنا ربانی کھر کو وزیر مملکت برائے خارجہ، عبدالرحمن خان کانجو کو وزیر مملکت برائے امور داخلہ، محمد ہاشم نوتیزئی کو وفاقی وزیر مملکت اور مصدق ملک کو وزیر مملکت پیٹرولیم مقرر کیا گیا ہے۔
وزیر اعظم کے 3 معاون خصوصی میں طارق فاطمی کو معاون خصوصی برائے امور خارجہ، حنیف عباسی کو معاون خصوصی اور محمد صادق کو بحیثیت وزیر مملکت وزیر اعظم کا معاون خصوصی مقرر کیا گیا ہے، 3 مشیروں میں مسلم لیگ (ن) کے انجینئر امیر مقام، پیپلزپارٹی کے قمر زمان کائرہ اور پی ٹی آئی ترین گروپ کے عون چوہدری شامل ہیں۔

Related Articles

Back to top button