عدالت اعظمیٰ میں سیاستدانوں کے داخلے پر پابندی عائد

عدالت اعظمیٰ کی جانب سے وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کے انتخاب کیس کی سماعت کے دوران سیاستدانوں کے سپریم کورٹ میں داخلے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔
پابندی ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کی رولنگ سے متعلق درخواستوں کی سماعت کے دوران ہوگی جبکہ عدالت اعظمیٰ کے باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کرتے ہوئے رینجرز کی نفری تعینات کردی گئی۔
کیس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ آنے والے راستوں کو بند کر دیا جائے گا، سیرینا چوک اور مارگلہ روڈ سے گاڑیوں کا ریڈزون میں داخلہ ہوگا، ریڈزون میں میڈیا اور سرکاری ملازمین کو ہی داخلے کی اجازت ہوگی، ریڈ زون میں کسی قسم کے احتجاج کی اجازت نہیں۔
واضح رہے کہ آج سپریم آف پاکستان میں وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق اہم سماعت ہوگی، سماعت کے موقع پر کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے اور نمٹنے کیلئے کیپٹل پولیس نے ریڈ زون کے لیے سخت حفاظتی کیے گئے ہیں۔
ادھر ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری رولنگ کیس میں وفاقی حکومت کے اتحادیوں نے فریق بننے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کر دی، پیپلز پارٹی نے چوہدری پرویز الہٰی کی درخواست میں فریق بننے کی درخواست سپریم کورٹ میں جمع کرا دی، جس میں استدعا کی گئی ہے کہ پنجاب اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے ارکان موجود ہیں ان کا موقف سنا جائے۔
عدالت اعظمیٰ میں جے یو آئی ف نے بھی فریق بننے کی درخواست دائر کی ہے ، ایڈووکیٹ سینیٹرکامران مرتضٰی کے ذریعے دائر کی گئی درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ یہ انتہائی اہم نوعیت کا معاملہ ہے اس لیے ہمارا بھی موقف سنا جائے۔

Related Articles

Back to top button