ناظم جوکھیو قتل کیس انسداد دہشتگردی عدالت منتقل کر دیا گیا

ناظم جوکھیو قتل کیس میں جوڈیشل مجسٹریٹ کا بڑا فیصلہ سامنے آ گیا، مقدمہ انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت منتقل کر دیا گیا ہے۔

کراچی ملیر کورٹ میں جوڈیشل مجسٹریٹ نے ناظم جوکھیو قتل کیس کے چالان سے متعلق تحریری فیصلہ جاری کر دیا، مقدمہ انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت منتقل کرنے کا حکم دیدیا گیا، تحریری فیصلے میں فریقین کے دلائل سننے کے بعد عدالت سمجھتی ہے کہ مقدمہ انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت میں چلنا چاہئے۔

حکومت کیخلاف تحریک عدم اعتماد آئیگی، ماحول جلد تبدیل ہوگا

جوڈیشل مجسٹریٹ نے تحریری فیصلے میں کہا کہ مقدمے کی سماعت کے دوران یہ بات ریکارڈ پر ہے کہ مقتول اور ملزموں کے درمیان کوئی رنجش یا دشمنی نہیں تھی، ملزموں کے اقدام کا مقصد عدم تحفظ کا احساس پیدا کرنا اور خوف پھیلانا تھا۔

ماڈل کرمنل کورٹ نے بھی مقدمے کو دہشتگردی کے زمرے میں قرار دیا تھا۔ ماڈل کرمنل کورٹ نے ملزموں کی درخواست ضمانت اسی بنیاد پر خارج کی تھی، عدالت نے تفتیشی افسر کو انسداد دہشتگردی کی منتظم عدالت سے رجوع کرنے کا حکم دیدیا۔ جوڈیشل مجسٹریٹ نے تحریری فیصلے میں مقدمے کا چالان اور پولیس فائل انسداد دہشتگردی منتظم جج کے روبرو پیش کرنے کا بھی حکم دیا۔

Related Articles

Back to top button