ریلوے وزیر کاایکسپریس ٹرینوں کا کرایہ10،فریٹ کا 15 فیصد بڑھانے کا اعلان

ریلوے وزیر خواجہ سعد رفیق نے ایکسپریس ٹرینوں کے کرایوں میں 10 ،فریٹ کے کرایوں میں ب 15 فی صد اضافہ جبکہ مسافر ٹرینوں کا کرایہ نہ بڑھانے کا اعلان کیا ہے ۔

لاہور ریلوے ہیڈ کوارٹرز پریس کانفرنس کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا اب ریلوے صرف ریلوے افسران ہی چلائیں گے، اس میں کوئی مداخلت نہیں ہوگی، ٹرینوں کے اندر سی سی ٹی وی لگانے پر ڈسکشن ہو رہی ہے، تاہم ابھی تک کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا۔

امریکی CIA کا جاسوس ڈاکٹر 10 برس سے پاکستانی قید میں

ریلوے وزیر نےکہا کہ 2013ء میں ریلوے کا چارج سنبھالا تھا، 18 ارب روپے کمایا تھا، آمدن بڑھ کر 50 ارب ہو چکی تھی اور ریلوے کا خسارہ ساڑھے 36 ارب تھا۔ اب واپس آئے ہیں تو آمدن 53.3 ارب جب کہ خسارہ 37 ارب سے زائد ہے جہ 45 ارب تک جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے کی آمدن بھی سست روی سے چل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں نظام خراب کیا گیا ہے۔ ریلوے ہیڈ کوارٹر کے فیصلے اسلام آباد لے جائے گئے۔

سعد رفیق نے ٹرین میں زیادتی کیس سے متعلق بات کرتے ہوئےکہا متاثرہ خاتون کو نوکری دی جائے گی اور ان کے نام پر ایک اکاؤنٹ بنا کر اس میں کچھ پیسے جمع کرائے جائیں گے۔ اس کیس کو پورا فالو کرتے ہوئے ملزمان کو سزا دلوائیں گے۔ انہوں نے بڑے بڑے وکیل کیے ہیں، ہمیں بھی کرنے پڑے تو کریں گے۔

انکا کہنا تھا ٹرینوں میں صفائی کے نظام کو بہتر کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ فیول کی قیمتیں بڑھنے سے 8ارب کا فسکل نقصان ہو رہا ہے۔ ہر ماہ74کروڑ کا نقصان ہو رہا ہے، مسافر ٹرینوں کا کرایہ نہیں بڑھا رہے کیونکہ اس میں غریب سفر کرتا ہے،مگر ایکسپریس کا 10 فی صد اور فریٹ کا 15 فی صد کرایہ بڑھا رہے ہیں۔ اس سے تقریباً ایک ارب روپے کی بچت کا موقع ملے گا۔

وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ اس وقت پاکستان پر مشکل ترین وقت ہے، تاہم اللہ کی مدد سے اس آزمائش سے نکل جائیں گے۔ دھڑے یا افراد جو چاہتے ہیں کہ ساری طاقت ان کے پاس ہو، اب یہ نہیں چلے گا۔میرٹ پالیسی لاگو کر دی ہے، کوئی سیاسی بھرتی نہیں ہوگی بلکہ باقاعدہ اشتہار جاری کیا جائے گا۔

Related Articles

Back to top button