سری لنکن منیجر قتل: ملزم نے سزائے موت چیلنج کر دی

انسداد دہشتگردی عدالت کی جانب سے سزائے موت کے فیصلے کو ملزم حافظ محمد تیمور نے لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا ہے، اور اس حوالے سے عدالت میں اپیل دائر کر دی گئی ہے۔

حافظ محمد تیمور نے اپیل میں موقف اپنایا کہ استغاثہ شہادت کی بنیاد پر ملزم کے خلاف جرم ثابت کرنے میں ناکام رہی، حافظ تیمور پر الزام ہے کہ اس نے سری لنکن شہری کے سر پر اینٹ ماری لیکن فرانزک سائنس ایجنسی کی رپورٹ میں اینٹ مارنے کے متعلق رپورٹ منفی ہے۔

درخواست میں کہا گیا کہ عدنان ملک سمیت دو چشم دید گواہوں کی شہادتیں بھی قانونی تقاضے پورے نہیں کرتیں، سری لنکن شہری پریانتھا کمار کو قتل کرنے کا وقوعہ باقاعدہ منظم منصوبے کے تحت نہیں تھا بلکہ حادثاتی تھا۔

انسداد دہشتگردی عدالت نے ٹھوس شواہد کے بغیر 6 ملزموں کو سزائے موت سنائی، اس حوالے سے وکیل صفائی نے کہا کہ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کی روشنی میں کسی ہجوم میں ہر ملزم کے کردار کی شناخت نہیں ہو سکتی ہے اور اسے سزا بھی نہیں دی جا سکتی ہے لہٰذا انسداد دہشتگردی کورٹ کا ملزم کو سزائے موت دینے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے۔

Related Articles

Back to top button