دھمکیوں کے باوجود امریکی ماڈل فلسطینیوں کی حمایت کے لیے پرعزم

اسرائیل کی جانب سے نہتے فلسطینیوں کے قتل عام کیخلاف جہاں دنیا بھر میں احتجاج جاری ہے وہیں شوبز شخصیات بھی فلسطینیوں سے اظہار ہمدردی کر رہی ہیں، عراقی نژاد امریکی ماڈل ھدیٰ قطان نے دھمکیوں کے باوجود فلسطینیوں کی حمایت جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔40 سالہ عراقی نژاد امریکی ماڈل غزہ میں اسرائیل کے مظالم کے خلاف سوشل میڈٰیا پر بھرپور آواز بلند کر رہی ہیں، انسٹا گرام سٹوری میں ھدیٰ قطان نے کہا کہ انہوں نے غزہ کی پٹی پر اسرائیل کے حملے کے خلاف بول کر کچھ غلط نہیں کیا، ’مجھے ڈرایا نہیں جا سکتا۔ھدیٰ قطان نے کہا کہ ہم کچھ کھونے سے نہیں ڈر سکتے، ہمیں اس عمل پر بھروسہ کرنا ہوگا کہ اگر ہم کچھ کھو دیتے ہیں تو کچھ اور ہمارے پاس صحیح طریقے سے آئے گا، کیونکہ ہم اچھا کام کر رہے ہیں، اور میں اس پر پورے دل سے یقین رکھتی ہوں۔دھمکیوں اور اپنے بیوٹی مصنوعات کے کاروبار میں نقصان کے خدشات کے باوجود امریکی ماڈل ھدیٰ قطان فلسطینیوں کی حمایت میں غیرمتزلزل نظر آ رہی ہیں، انہوں نے سختی کے ساتھ یہود دشمن ہونے کی تردید کی اور معصوم فلسطینی عوام کے مصائب پر اپنی توجہ مرکوز کرنے پر زور دیا، قطان نے اسرائیلی حکومت پر مذہب اور لوگوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا الزام عائد کیا ہے، یہ پہلا موقع نہیں ہے جب قطان کو اپنے فلسطین کی حمایت میں موقف کی وجہ سے دھمکیوں کا سامنا کرنا پڑا ہو، اکتوبر میں ایک اسرائیلی پرستار نے اس پر الزام لگایا کہ وہ غزہ کے اسرائیلی صارفین پر احسان کر رہی ہے، جس پر قطان نے جواب دیا، ’’مجھے خون کا پیسہ نہیں چاہئے‘‘، اس واقعے کے نتیجے میں سیفورا پر زور دیا گیا کہ وہ اپنے امریکی اسٹورز سے ھدیٰ بیوٹی مصنوعات ہٹائے۔وقتا فوقتاً ھدیٰ قطان انسٹا گرام پر فلسطینیوں کے حق میں اپنے جذبات کا اظہار کرتی رہتی ہیں، انہوں نے انسٹاگرام اسٹوری میں اپنے مداحوں کو فلسطین کے جھنڈے کے واٹرمارکس لگانے کو کہا تھا جس پر ان کے سینکڑوں مداحوں نے انسٹاگرام پر فلسطین کے جھنڈے لگائے تھے جس پر انہوں نے اپنے مداحوں کا شکریہ بھی ادا کیا تھا، واضح رہے کہ عراقی نژاد امریکی ماڈل ھدیٰ قطان کے میک اپ کے کاروبار کی مالیت امریکا میں 1.2 بلین ڈالر ہے، انسٹاگرام پر ان کی فالوورز 54 ملین ہیں۔

Related Articles

Back to top button