فلم ’’ضرار‘‘ ناکام اور ’’ٹچ بٹن‘‘ کامیاب کیوں قرار پائی؟

کسی بھی فلم کی کامیابی میں سکرپٹ کو بنیادی اہمیت حاصل ہوتی ہے، فلم کی کہانی ہی فلم بینوں میں جوش اور لطف پیدا کرتی ہے، ایک ہی دن ریلیز ہونے والی فلموں شان شاہد کی فلم ضرار اور اے آر وائی کی فلم ٹچ بٹن میں کڑا مقابلہ تھا جس میں ٹچ بٹن فاتح قرار پائی ہے۔ دراصل دونوں فلموں کا کوئی موزانہ نہیں تھا، ضرار کی پروموشن بہت بڑے پیمانے پر ہوئی تھی، ضرار کے مصنف و ہدایت کار سٹار ہیرو شان تھے جنہوں نے فلم میں مرکزی کردار بھی ادا کیا تھا۔ شان کے بھائی اعجاز شاہد فلمساز ہیں جو کسی دور میں تین فلموں؛ فتح، دنیا دس نمبری اور پیار ہی پیار میں ہیرو آئے تھے مگر ناکام رہے تھے۔ پھر وہ امریکہ چلے گئے جہاں اپنا کاروبار شروع کر دیا۔ اب بطور فلمساز ان کی وطن واپسی ہوئی ہے۔

‘ضرار’ کی کہانی ایک آئی ایس آئی کے ریٹائرڈ کرنل اور حاضر سروس ایجنٹ کی ہے۔ یہ دونوں کردار لیجنڈ اداکار ندیم اور شان نے ادا کیے ہیں۔ دیگر اداکاروں میں کرن ملک، نیّر اعجاز، شفقت چیمہ اور عدنان بٹ شامل ہیں۔ شان نے طویل عرصہ پاکستان کی سنیما سکرین پر راج کیا ہے۔ لاتعداد کامیاب فلمیں دی ہیں مگر پچھلے سات برسوں سے انکی کوئی بھی فلم  کامیاب  نہیں ہو سکی۔ اسلئے ان کے فلمی کیرئیر کا دارومدار اس فلم کی کامیابی پر تھا مگر بدقسمتی سے یہ بھی ناکام ہوتی نظر آ رہی ہے۔

 

‘ضرار’ کا بجٹ 25 سے 30 کروڑ کے لگ بھگ تھا۔ لیکن اب تک دنیا بھر سے ایک ہفتے میں ضرار محض 8 کروڑ روپے ہی کما سکی ہے جو توقعات سے بہت کم ہے۔ بڑے پیمانے پر فلم کی پروموشن کے بعد توقع تھی کہ فلم پہلے ہفتے میں 15 کروڑ سے زائد کمانے میں کامیاب ہو گی مگر ایسا نہیں ہو سکا ہے۔

 

اس میں کوئی شک نہیں کہ شان بہت اچھے ہدایت کار ہیں، لیکن وہ گنز اینڈ روزز، مجھے چاند چاہئے، موسیٰ خان، ظل شاہ اور ارتھ ٹو جیسی اچھی فلمیں دینے کے باوجود بطور ہدایت کار کامیابی حاصل نہیں کر سکے۔‘ضرار’ بھی ان کی پاکستان کے سنیما کو بین الاقوامی سطح پر پیش کرنے کی ایک کوشش تھی۔ فلم کی عکس بندی ترکی، برطانیہ اور پاکستان میں کی گئی، اس میں کوئی شک نہیں کہ شان نے یہ فلم بہت بڑے لیول پر شوٹ کی تھی اور کچھ انگریزی اداکاروں کو بھی کاسٹ کیا۔ فلم انگریزی اور اردو زبان میں بنائی گئی مگر فلم پہلے ہفتے میں توقعات سے بہت کم بزنس کر سکی جس پر شان بھی یقیناً مایوس ہوئے ہوں گے۔

 

ضرار کیساتھ ریلیز ہونے والی دوسری فلم اے آر وائی فلمز کی ‘ٹچ بٹن’ تھی جس میں فیروز خان، فرحان سعید، ایمان علی اور سہیل احمد نے مرکزی کردار ادا کیے، فلم کی مصنفہ ٹی وی کی کامیاب سکرپٹ رائٹر فائزہ افتخار ہیں جبکہ ہدایت کار قاسم علی ہیں۔ فلم کا بجٹ 15 کروڑ روپے ہے۔ یہ فلم ایک ہفتے میں دس کروڑ کے قریب کمانے میں کامیاب رہی ہے اور توقع ہے کہ آنے والے چند دنوں میں اپنا بجٹ ریکور کر کے منافع میں چلی جائے گی۔ ہم اس فلم کو باقاعدہ ہٹ کہہ سکتے ہیں۔

’’ٹچ بٹن‘‘ پنجاب کے دیہی پس منظر پر بنی اردو فلم ہے جو اپنے مضبوط سکرپٹ کے باعث فلم بینوں کے دل جیتنے میں کامیاب رہی ہے، اس میں اداکاروں کی کارکردگی بھی اچھی رہی ہے۔اے آر وائی فلمز جیسے بڑے ادارے کی بنی اس فلم نے دیکھنے والوں کو مایوس نہیں کیا۔ ‘ضرار’ اور ‘ٹچ بٹن’ کا بنیادی فرق سکرپٹ کا تھا۔ ‘ٹچ بٹن’ کا سکرپٹ ایک منجھی ہوئی سکرپٹ رائٹر فائزہ افتخار نے لکھا ہے جبکہ شان بنیادی طور پروفیشنل سکرپٹ رائٹر نہیں ہیں۔ وہ بہت اچھے اداکار اور ہدایت کار ہیں مگر فلم کی بنیاد سکرپٹ پر ہوتی ہے جہاں شان کی ‘ضرار’ مات کھا گئی۔

Related Articles

Back to top button