پاکستان میں پابندی کا شکار ’’جوائے لینڈ‘‘ امریکی ایوارڈ کیلئے نامزد

ٹرانس جینڈرز یا مخنث افراد بارے بنائی گئی پاکستانی فلم ’’جوائے لینڈ‘‘ آسکر ایوارڈ کے لیے نامزد ہونے کے بعد اب ایک معروف امریکی ایوارڈ انڈیپنڈنٹ اسپرٹ ایوارڈ

کے لیے بھی نامزدگی حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئی ہے۔ ’جوائے لینڈ‘ کو پاکستان بھر میں 18 نومبر کو جزوی طور پر ریلیز کیا گیا تھا، کیونکہ پنجاب کے فلم سینسر بورڈ نے اس کی نمائش پر پابندی لگا رکھی ہے، ہم جنس پرستی کو فروغ دینے کا الزام لگنے کے بعد تنازع کا شکار ہو جانے والی فلم پر پہلے مرکزی فلم سینسر بورڈ نے 12 نومبر کو پابندی لگائی تھی، تاہم وزیر اعظم شہباز شریف کی جانب سے نوٹس لیے جانے کے بعد اسے نمائش کے لیے کلیئر قرار دیا گیا تھا۔ لیکن اسکے بعد فلم سینسر بورڈ پنجاب نے اسکی نمائش پابندی عائد کر دی تھی، تاہم اسے 18 نومبر کو سندھ، خیبر پختونخوا اور اسلام آباد میں محدود سینما اسکرینز پر ریلیز کیا گیا تھا۔

اب ’جوائے لینڈ‘ کو امریکا میں ہونے والے سالانہ ’فلم انڈیپنڈنٹ اسپرٹ ایوارڈ میں ایوارڈ کے لیے نامزد کر دیا گیا ہے، فلم فیسٹیول کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق پاکستانی فلم کو ’انٹرنیشنل فلم‘ کی کیٹیگری کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔جوائے لینڈ‘ کا مقابلہ دیگر پانچ ممالک کی فلموں سے ہوگا اور پاکستانی فلم کے مقابلے نامزد ہونے والی ایک فلم کو متعدد کیٹیگریز میں بھی نامزد کیا گیا ہے۔

 

’فلم انڈیپنڈنٹ سپرٹ ایوارڈ‘ کا انعقاد 4 مارچ 2023 کو ریاست کیلی فورنیا میں ہوگا، فلم فیسٹیول کے علاوہ ’جوائے لینڈ‘ نے رواں برس جرمنی میں ہونے والے کانز فلم فیسٹیول میں بھی ایوارڈ جیتا تھا۔علاوہ ازیں ’جوائے لینڈ‘ کو کینیڈا میں ہونے والے ’’ٹورنٹو فلم فیسٹیول‘‘ میں بھی پیش کیا گیا تھا جبکہ اس نے میلبورن آسٹریلیا میں ہونے والے بھارتی فلم فیسٹیول میں بھی ایوارڈ اپنے نام کیا تھا۔ ’جوائے لینڈ‘ کو برازیل میں ہونے والے ساؤ پولو فلم فیسٹیول میں بھی پیش کیا گیا تھا، جہاں اس کے مرکزی اداکار علی جونیجو نے بہترین اداکار کا ایوارڈ جیتا تھا، اسی فلم کو پاکستان کی کمیٹی نے اعلیٰ ترین فلمی ایوارڈ ’آسکر‘ کے لیے بھی نامزد کر کے اسے بھجوا رکھا ہے اور آسکر کا انعقاد بھی آئندہ برس مارچ میں ہوگا۔ ہدایت کار صائم صادق کی اس فلم کی کاسٹ میں سرمد کھوسٹ، ثروت گیلانی، علینا خان، سہیل سمیر، سلمان پیر، ثانیہ سعید، کنول کھوسٹ، زویا احسن، ثنا جعفری اور قاسم عباس سمیت دیگر اداکار شامل ہیں۔

’جوائے لینڈ‘ کی کہانی ایک ایسے نوجوان کے گرد اور مخنث ڈانسر کے گرد گھومتی ہے جو ڈانس کلب میں کام کرنے کے دوران ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہو جاتے ہیں۔ فلم کو کہانی کے اچھوتے موضوع کی وجہ سے کافی سراہا گیا اور پاکستان جیسے معاشرے میں معیوب سمجھے جانے والے موضوع پر فلم بنانے کی وجہ سے ہی اس کی ٹیم کو اعلیٰ ترین عالمی ایوارڈز سے بھی نوازا گیا۔

Related Articles

Back to top button