سدھو موسے والا کا گرفتار قاتل شوٹرسنتوش کون ہے؟

بھارتی پنجاب میں معروف سکھ گلوکار سدھو موسے والا کو گولیاں مارکرقتل کرنے والے شارپ شوٹر سنتوش یادیو نے گرفتاری کے بعد پولیس کی حراست میں بتایا ہے کہ وہ چھوٹی عمر سے ہی جرائم کی دنیا میں آ گیا تھا اور تب سے یہی اسکا دھندا ہے۔ سدھو موسے والا کے قاتل سنتوش کو پونے پولیس نے گجرات کے کچے کے علاقے سے گرفتار کیا ہے۔ عدالت نے ملزم کو 20 جون تک پولیس حراست میں بھیج دیا ہے۔ سنتوش دراصل لارنس بشنوئی گینگ کا رکن بتایا جاتا ہے جس نے سدھو موسے والا کے قتل کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

بشریٰ بی بی کی سہیلی فرح خان نے کہاں سے کتنا مال بنایا؟

مہاراشٹر کے ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل آف پولیس کلونت کمار سرنگل نے میڈیا کو بتایا کہ پونے پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ سنتوش گجرات میں کچے کے علاقے میں چھپا ہوا ہے۔ پونے پولیس سپرنٹنڈنٹ ابھینو نے میڈیا کو بتایا کہ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ سنتوش اپنے دوست نوناتھ کے ساتھ گجرات کے کچے میں چھپا ہوا ہے۔ پولیس نے پہلے نوناتھ کر گرفتار کیا۔ پہلے تو نوناتھ نے سنتوش کے بارے میں کوئی تفصیل نہیں دی لیکن دھلائی کے بعد یہ اعتراف کیا کہ اسنے سنتوش کو اپنے جاننے والے کے گھر رکھا تھا اور اسے ایک نیا سم کارڈ بھی دیا تھا۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ نے بتایا کہ سنتوش نے اپنا حلیہ بدل لیا تھا۔ سدھو موسے والا کے قتل کے بعد سنتوش کی تصویر میڈیا اور سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی۔ اس لیے اس نے اپنی شناخت چھپانے کے لیے اپنے بال کٹوائے تھے۔ پونے پولیس کے مطابق نوناتھ کے والد کام کے سلسلے میں کئی سالوں سے گجرات میں ہیں۔ نوناتھ اور سنتوش ایک دوسرے کو اچھی طرح جانتے ہیں۔ چنانچہ نوناتھ نے سنتوش کو چھپانے میں مدد کی۔ پولیس نے ملزم کو پناہ دینے پر نوناتھ کو گرفتار کر لیا ہے۔

خیال رہے کہ لارنس بشنوئی گینگ نے مشہور پنجابی گلوکار سدھو موسے والا کے قتل کی ذمہ داری قبول کی تھی۔ پونے پولیس کے مطابق سنتوش یادیو لارنس بشنوئی گینگ کا رکن ہے۔ موسے والا کے قتل کے بعد پولیس سنتوش کو شوٹر قرار دیتی ہے۔

یاد رہے کہ لارنس بشنوئی گینگ پنجاب، راجستھان اور ہریانہ میں سرگرم ہے۔ ویسے مہاراشٹر پولس کے مطابق لارنس بشنوئی گینگ کے کچھ لوگ مہاراشٹر میں بھی کام کر رہے ہیں۔ سدھو موسے والا کے قتل کے بعد دہلی، پنجاب اور مہاراشٹر پولیس اس کیس کی تحقیقات کر رہی ہے۔ لارنس بشنوئی کا نام موسے والا کے قتل کے بعد سامنے آیا ہے۔ سنتوش کا نام سدھو موسے والا قتل کیس سے پہلے پونے کے ایک مجرم اومکار عرف رانیہ کے قتل میں سامنے آیا تھا۔ الزام ہے کہ سنتوش یادیونے پونے کے ایکلاارے گاؤں کے قریب 25 سالہ رانیہ کا قتل کر دیا تھا۔ اس قتل میں 9 ملزم نامزد تھے، پولس نے سات کو گرفتار کیا لیکن مرکزی ملزم سنتوش کو پولیس پکڑ نہیں سکی تھی۔ لیکن دس ماہ بعد اسے سدھو موسے والا قتل کیس میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

Related Articles

Back to top button