شاہین آفریدی کوتنہا چھوڑنے کی خبریں بے بنیاد ہیں

چیئرمین پی سی بی رمیزراجہ نے فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی کوتنہاچھوڑ دینے سے متعلق خبروں کوبے بنیاد قرار دے دیا۔

پی سی بی چیئرمین فین فورم میں سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے نے کہا کہ شاہین شاہ آفریدی قومی ٹیم کا اہم فاسٹ بولر ہے، ان کو تنہا چھوڑ دینے سے متعلق یہ بحث غیر ضروری ہے جبکہ یہ کہنا غلط ہے کہ پی سی بی فاسٹ بولر کا ساتھ نہیں دے رہا۔

انہوں نے واضح کیا ہے کہ شاہین شاہ آفریدی کو پی سی بی کا مکمل تعاون حاصل ہے اورڈاکٹرز کی ٹیم انکے ساتھ برطانیہ میں موجود ہے، ایسا ممکن نہیں کہ بورڈ اپنے اسٹار کو تنہا چھوڑ دے۔

رامیض راجا نےمحمد رضوان کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ ورلڈ کپ میں جب وکٹ کیپر بلے باز کی طبعیت خراب ہوئی تھی اس وقت بھی پی سی بی نے اپنے کھلاڑی کی خدمت کی اور رات بھر ڈاکٹرز نے جاگ کر کھلاڑی کو ٹھیک کیا جس کے بعد وہ فائنل کھیلنے کے قابل ہوئے۔

چیئرمین پی سی بی نے بتایا کہ اسی طرح فخرزمان بھی اب جا رہے ہیں توان کو بھی بورڈ کا مکمل تعاون حاصل ہے، جتنا ہم اپنے کھلاڑیوں کے لیے کر رہے اس طرح کسی بھی بورڈ نے اپنے کھلاڑیوں کے لیے نہیں کیا۔

یاد رہے کہ سابق کپتان شاہد خان آفریدی نے گزشتہ روز نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ اگلے ماہ آسٹریلیا میں ہونے والے عالمی کپ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹورنامنٹ کے لیے پاکستان کے اعلان کردہ 15 رکنی اسکواڈ میں شامل انجری کا شکار فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی اپنی ری ہیب خود کر رہے ہیں اور پی سی بی ان کا بالکل ساتھ نہیں دے رہے۔

انکا کہناتھا میں نے شاہین شاہ آفریدی کی فٹنس کی بحالی کے لیے اپنے طورپر معالج کا بندوبست کر رکھا ہے۔

واضح رہے کہ فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی گھٹنے کی انجری سے صحت یاب ہونے کے بعد اکتوبر کے پہلے ہفتے میں لندن میں بولنگ کا آغاز کریں گے اور اسی ماہ کے آخر میں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے پاکستانی اسکواڈ میں شمولیت کے لیے آسٹریلیا جائیں گے، وہ جولائی میں گال میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ کے دوران دائیں گھٹنے میں چوٹ لگنے سے زخمی ہوئے تھے، جس کے بعد وہ سیریز کے دوسرے ٹیسٹ، پاکستان کے دورہ ہالینڈ اور ایشیا کپ سے باہر ہوگئے تھے۔بتدائی طور پر ان کی بحالی کا دورانیہ 28 اگست کو ختم ہونا تھا لیکن اس کے بعد وہ انگلینڈ کے خلاف سات میچز کی ٹی ٹوئنٹی ہوم سیریز سے بھی باہر ہوگئے ہیں۔

Related Articles

Back to top button