قومی کرکٹرزکی ٹیسٹ میچ فیس میں 10 فیصد اضافہ کردیا گیا

قومی کرکٹرز کی ٹیسٹ میچ فیس میں 10 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے ، جس کے بعد کرکٹرزکی ٹیسٹ میچ فیس 8 لاکھ 38ہزار530 روپے ہوگئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے یکم جولائی سے شروع ہونے والے نئے سینٹرل کنٹریکٹ کیلیے 30 جون کو منتخب کرکٹرز کی فہرست جاری کر دی تھی،اس بار ریڈ اوروائٹ بال کی مختلف کیٹیگریزمیں مجموعی طور پر33پلیئرزکو شامل کیا گیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق کپتان بابر اعظم،محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی دونوں طرز کی ’’اے‘‘ کیٹیگریز میں شامل ہیں،تمام کیٹیگریز اے، بی ، سی، ڈی اورای کے کرکٹرزکوریڈ اینڈ وائٹ بال کی یکساں میچ فیس دی جائے گی، گذشتہ سال کی فیس میں 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

رپورٹس میں بتایا گیا ہے ٹیسٹ میچ کا معاوضہ بڑھ کر8لاکھ 38ہزار530 روپے ہوگیا، پہلے7 لاکھ 62 ہزار300روپے ملتے تھے، ون ڈے انٹرنیشنل کی میچ فیس 5لاکھ 15 ہزار696 روپے ہو گئی، پہلے کا معاوضہ 4 لاکھ 68ہزار815 روپے تھا۔ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ کھیلنے پر3 لاکھ 72 ہزار75روپے ملیں گے، پرانی فیس 3لاکھ 38 ہزار250 روپے تھی۔

یاد رہے کہ حسن علی ریڈ بال کی بی اوروائٹ بال کی سی کیٹیگری میں موجود ہیں، امام الحق ریڈ بال میں سی اور وائٹ بال میں بی کیٹیگری کے حقدار بنے، 10 پلیئرز کو صرف ریڈ بال کا کنٹریکٹ دیا گیا، اظہر علی کواے ، فواد عالم کو بی ، عبد اللہ شفیق، نعمان علی اور نسیم شاہ کوسی ، سرفراز احمد، شان مسعود، یاسر شاہ، عابد علی اور سعود شکیل کوڈی کیٹیگری میں شامل کیا گیا، صرف وائٹ بال کنٹریکٹ پانے والے 11 کرکٹرز فخر زمان اور شاداب خان اے ، حارث رئوف بی اور محمد نواز سی کیٹیگری میں شامل ہیں، شاہنواز دھانی، عثمان قادر، حیدر علی، آصف علی، خوشدل شاہ ، زاہد محمود اور محمد وسیم جونیئر کوڈی کیٹیگری میں جگہ ملی،ڈومیسٹک کرکٹ کے پرفارمرز 7کرکٹرز علی عثمان، حسیب اللہ، کامران غلام، قاسم اکرم، محمد حارث، محمد حریرہ اور سلمان علی آغا کو ایمرجنگ کیٹیگری میں رکھا گیا ہے۔

Related Articles

Back to top button