ویمنز کرکٹرزکے سنٹرل کنٹریکٹ 2022-23 کا اعلان کر دیا گیا

پاکستان کرکٹ بورڈ نے خواتین کرکٹرزکیلئے سنٹرل کنٹریکٹ برائے23-2022 کا اعلان کردیا، طوبیٰ حسن، گل فیروزہ اورصدف شمس کو پہلی مرتبہ کنٹریکٹ کا حصہ بنایا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سینٹرل کنٹریکٹ میں 20 ویمن کرکٹرز کو شامل کیا گیا ہےجبکہ ندا ڈاراورعالیہ ریاض سمیت 8 کھلاڑیوں کو کنٹریکٹ میں ترقی دی گئی ہے جبکہ کیٹیگری اے میں بسمہ معروف، ندا ڈاراورعالیہ ریاض کو شامل کیا گیا ہے، کیٹیگری بی میں انعم امین، ڈیانا بیگ، فاطمہ ثناء، نشرہ سندھو اورعمیمہ سہیل شامل ہیں، کیٹیگری سی میں عائشہ نسیم، منیبہ علی، جویریہ خان، سدرہ امین اورسدرہ نواز کو شامل کیا گیا ہے، غلام فاطمہ، گل فیروزہ، ارم جاوید، کائنات امتیاز، سعدیہ اقبال، صدف شمس اور طوبیٰ حسن کو کیٹیگری ڈی کا حصہ بنایا گیا ہے۔

اسد کے علاوہ سال دوہزار 21 اور باعث میں عمدہ کارکردگی کی بدولت سدرہ امین، غلام فاطمہ اور ارم جاوید کو سینٹرل کنٹریکٹ میں شامل کرلیا گیا ہے، مئی میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی ویمن پلیئر آف دی منتھ کا ایوارڈ جیتنے والی 21 سالہ طوبیٰ حسن کو سینٹرل کنٹریکٹ کی ڈی کیٹگری کا حصہ بنایا گیا ہے۔

پہلی مرتبہ سنٹرل کنٹریکٹ کا حصہ بننے پر طوبیٰ حسن کا کہنا تھا کہ وہ پہلی مرتبہ سینٹرل کنٹریکٹ ملنے پر بہت خوش ہیں، بالآخر انہیں اپنی سخت محنت کا صلہ ملنا شروع ہوگیا ہے، ان کی تمام تر توجہ میدان میں عمدہ کارکردگی پیش کرنے پر مرکوز ہے ، وہ اب اپنی محنت دگنی کردیں گی، وہ اس سفر میں بھرپور ساتھ دینے پر اپنی تمام سینئر کھلاڑیوں، دوستوں، اہل خانہ اور سپورٹ سٹاف کی مشکور ہیں، ان کا واحد مقصد پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنا ہے، انہیں یقین ہے کہ وہ خود سے جڑی تمام توقعات پر پورا اترنے کی ہر ممکن کوشش کریں گی۔

چیئر آف ویمنز سلیکشن کمیٹی اسماویہ اقبال نے کہاکہ 8 کھلاڑیوں کا ترقی اور 3 کا پہلی مرتبہ سینٹرل کنٹریکٹ پانا درحقیقت پاکستان خواتین کرکٹ کے درست سمت میں آگے بڑھنے کی نشاندہی کرتا ہے تاہم انہیں اب بھی بہت محنت کی ضرورت ہے،سیزن 2022-23 میں جتنی زیادہ کرکٹ کھیلنے کی مل رہی ہے، وہ پرامید ہے کہ اس سیزن کے اختتام پر پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم ایک مزید بہتر سائیڈ بن کر سامنے آئے گی، سینٹرل کنٹریکٹ نہ صرف کھلاڑیوں کی گزشتہ سیزن میں عمدہ کارکردگی کا صلہ ہوتا ہے بلکہ یہ انہیں آئندہ سیزن میں بھی بہتر کھیل پیش کرنے کی ترغیب دیتا ہے۔

اسماویہ اقبال نے کہا کہ وہ گزشتہ سیزن میں بھرپور عزم اور لگن کا مظاہرہ کرنے پر تمام کھلاڑیوں کی مشکور ہیں، وہ امید کرتی ہیں کہ یہ تمام کرکٹرز آئندہ سیزن کے دوران کامن ویلتھ گیمز، آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ اور آئی سی سی ویمنز ٹی 20 ورلڈ کپ میں بھی بہترین کارکردگی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

Related Articles

Back to top button