ٹوئیٹر پر کتنے فیصد لوگوں کے اکاؤنٹ جعلی ہوتے ہیں؟


دنیا کے امیر ترین انسان ایلون مسک نے سب سے بڑے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹوئیٹر کی خریداری کیلئے 44 ارب ڈالر ادا کرنے سے انکار کرتے ہوئےکہا ہے کہ ٹوئیٹر پر پانچ نہیں بیس فیصد اکائونٹس جعلی ہیں ۔ مسک نےٹوئیٹر انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ اب وہ قیمت کو چوالیس ارب ڈالر سے نیچے لے کر آئیں۔

بلوم برگ نیوز کی رپورٹ کے مطابق الیکٹرانک کاریں بنانے والی کمپنی ٹیسلا اور ٹیکنالوجی کمپنی سپیس ایکس کے سی ای او ایلون مسک نے میامی میں ہونے والی ایک ٹیکنالوجی کانفرنس میں بتایا کہ کم قیمت پر سب سے بڑے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کو خریدنے کا قابل عمل معاہدہ ممکن ہے، آل اِن سمٹ میں بھی ایلون مسک نے اندازہ لگایا کہ ٹوئٹر کے 229 ملین اکاؤنٹس میں سے کم از کم 20 فیصد سپیم بوٹس ہیں، جوکہ کم ترین شرح ہے۔

یہ بات ایلون مسک کی جانب سے ٹوئٹر کے سی ای او پراگ اگروال کو تضحیک کا نشانہ بنانے کے چند گھنٹوں بعد سامنے آئی، جنہوں نے اپنی ٹوئٹر بوٹس کی وضاحت کرتے ہوئے متعدد ٹویٹ پوسٹس کیں اور بتایا کہ پانچ فیصد سے بھی کم ٹوئٹر اکاؤنٹس جعلی ہیں۔

مجموعی طور پر، دن بھر ہونے والے واقعات نے تجزیہ کاروں کے ان نظریات کو تقویت دی کہ ایلون مسک یا تو معاہدے سے باہر ہونا چاہتے ہیں یا کم قیمت ادا کرنے کے خواہاں ہیں، جس کی بڑی وجہ ٹیسلا سٹاک کی قیمت میں بہت زیادہ کمی ہے، وہ ٹوئٹر خریدنے کیلئے ٹیسلا کے کچھ شیئرز فروخت کریں گے۔

ٹوئٹر کے شیئرز پیر کو صرف آٹھ فیصد سے زیادہ کی کمی کے ساتھ 37.39 ڈالر پر بند ہوئے، ایلون مسک کے انکشاف سے کچھ دیر پہلے ٹوئٹر کے شیئرز کی قیمت اس سے اوپر تھی، وہ ٹوئٹر کے سب سے بڑے شیئر ہولڈر ہیں، ایلون مسک نے 14 اپریل کو ٹوئٹر کا فی شیئر 54.20 ڈالر میں خریدنے کی پیشکش کی تھی۔

جمعے کو ایلون مسک نے ٹویٹ کی کہ ٹوئٹر خریدنے کے منصوبے کو عارضی طور پر ملتوی کر دیا ہے کیونکہ وہ اس سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر جعلی اکاؤنٹس کی تعداد جاننے کی کوشش کر رہے ہیں، ٹیسلا اور سپیس ایکس کے سی ای او نے کہا کہ ٹوئٹر کی جانب سے تفصیلات زیر التوا ہیں، جس کے مطابق جعلی اکاؤنٹس صارفین کے پانچ فیصد سے بھی کم ہیں۔

پراگ اگروال نے تسلیم کیا تھا کہ ٹوئٹر سپیم پکڑنے میں زیادہ کامیاب نہیں ہے، ہر سہ ماہی میں کمپنی نے پانچ فیصد سے بھی کم سپیم کا تخمینہ لگایا، اگروال نے لکھا کہ ہمارا تخمینہ ہزاروں اکاؤنٹس کے متعدد انسانی جائزوں پر مبنی ہے اور یہ جائزہ وقت کے ساتھ مسلسل لیا جاتا ہے۔

سی ای او ٹوئیٹر نے لکھا کہ گذشتہ چار سہ ماہیوں کے تخمینے کے مطابق جعلی اکاؤنٹس پانچ فیصد سے کم تھے، ہمارے اندازوں میں غلطی کے مارجن کی وجہ سے ہم ہر سہ ماہی میں پراعتماد انداز میں بیانات دیتے ہیں، ایلون مسک نے اپنے پسندیدہ پلیٹ فارم ٹوئٹر کا استعمال کرتے ہوئے ایموجی کے ساتھ جواب دیا، پھر پوچھا کہ ٹوئٹر کو اشتہار دینے والوں کو یہ کیسے پتا چلتا ہے کہ انہیں اپنے پیسوں کے عوض کیا مل رہا ہے۔

ایلون مسک نے تبصرے کیلئے بھیجے گئے پیغامات کا فوری جواب نہیں دیا، دوسری جانب آل ان سمٹ نے ایک ای میل میں کہا ہے کہ وہ آنے والے دنوں میں مسک کی ویڈیو پوسٹ کرے گا۔

Related Articles

Back to top button