ثابت ہواعمران نےسائفر سازشی بیانیہ سے ملک کو نقصان پہنچایا

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی جانب سے غیر ملکی سازش کے بیانیے سے پیچھے ہٹنے سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس نے اپنی سیاست کے لیے پاکستان کے سفارتی تعلقات کو نقصان پہنچایا۔

خیال رہے کہ 13 نومبر کو سابق وزیر اعظم اور چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان نے برطانوی اخبار ’فنانشل ٹائمز‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ اقتدار سے ہٹائے جانے کے لیے اب میں امریکی انتظامیہ کو مزید مورد الزام نہیں ٹھہراتا، واشنگٹن اور اسلام آباد کے درمیان باوقار تعلقات چاہتے ہیں۔ عمران خان نےمبینہ سازش میں امریکا کے کردار کے حوالے سے تبصرہ کیا کہ ’جہاں تک میرا خیال ہے یہ معاملہ اب ختم ہوچکا ہے، میں آگے بڑھ چکا ہوں۔

دوسری جانب وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا تھا کہ سابق وزیر اعظم عمران خان کو جواب دینا ہوگا کہ حکومت کی تبدیلی پر اپنائے گئے بیرونی ملک کی سازش کے ان کے بیانیے میں اچانک تبدیلی کیسے آئی۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک بیان میں مریم اورنگزیب نے کہا تھا کہ امریکی سازش کا بیانیہ پسِ پشت ڈالنے سے بات ختم نہیں ہوگی، جس بیانیہ پر پورے ملک میں انتشار اور جھوٹ پھیلایا آپ کو اس پر جواب دینا پڑے گا، جواب دیے بغیر صرف دستبرداری کافی نہیں، آج عمران خان سے سوال نہیں بلکہ آج عمران کی بات پر یقین کرنے والوں کے لیے سوالیہ نشان ہے۔

انہوں نے عمران خان پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ جھوٹے، ملکی مفاد سے کھیل کھیلنے والے فارن فنڈڈ فتنے کی بات سُننے والوں کے لیے سوالیہ نشان ہے کہ پارلیمان کو، افواجِ پاکستان کو، اداروں کو غدار ٹھہرا کر بات ختم کرنا، ایسے نہیں ہوگا عمران خان، اپنے جھوٹ کے لیے آئینی عہدوں سے آئین شکنی کروائی، عمران خان ملک کو تہس نہس کر کے آج امریکی سازش کے بیانیہ سے دستبردار ہو گئے ہیں، عمران خان نے اپنے حامیوں کو پاگل اور بھیڑ بکریاں سمجھ رکھا ہے۔

قبل ازیں وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی شیری رحمٰن نے بھی بیانیہ تبدیل کرنے پر عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

Related Articles

Back to top button