حکومتی قائدین کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا مطالبہ کر دیا

تحریک انصاف کے رہنما وسابق وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا ہے کہ حکومتی اتحاد کے جن قائدین نے پریس کانفرنس کی ان کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں۔

اسلام آباد میں حکمران اتحاد کی پریس کانفرنس کے جواب میں تحریک انصاف کے دیگر رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران فواد چوہدری نے کہا کہ کچھ دیر پہلے آپ نے ایک فلم دیکھی جس کا نام لندن ہی جاؤں گی تھا۔ فلم کے سارے کردار بھی ساتھ تھے، یہ پریس کانفرنس مریم اورنگزیب کے شوہر کی جانب سے منعقد کی گئی، اس پریس کانفرنس میں سپریم کورٹ پر براہ راست حملہ کیا گیا۔

ا نکا کہنا تھا یہ ایک سسلین مافیا ہے، یہ وہ مافیا ہے جو سپریم کورٹ کو دھماکے سے اڑاتے ہیں، مریم نواز عدلیہ کے خلاف پریس کانفرنس کر رہی ہیں جو خود ضمانت پر رہا ہیں۔

فواد چوہدری نے کہا کہ سپریم کورٹ سے کہتے ہیں کہ پریس کانفرنس کرنے والوں کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں، مریم نواز نے جن 539 ٹویٹر اکاؤنٹس کو فالو کیا ہے، ان سے 11 ہزار ٹویٹس سپریم کورٹ کے خلاف کی گئی ہیں، مریم اورنگزیب کو تو 14 سال سزا ہونی چاہئے، مریم اورنگزیب کے شوہر کو ایک کروڑ سگریٹ کے حوالے سے ٹھیکا دیا گیا۔

انہوں نے سپریم کورٹ کے فل کورٹ بینچ کی تشکیل کے مطالبے پر کہا کہ فل کورٹ کے مطالبے کا مقصد کیس کو طول دینا ہے، فل بینچ چیف جسٹس کی صوابدید ہے، باہر سے استدعا کرنا جائز نہیں، امید ہے سپریم کورٹ کسی دباؤ میں نہیں آئے گی۔

فواد چوہدری نے کہا کہ پیپلز پارٹی کا پنجاب سے کیا تعلق رہ گیا، ان کی پنجاب اسمبلی میں 6 تو سیٹیں ہیں، بھانت بھانت کے لوگ پارٹی میں بھرے ہوئے ہیں ،بلاول بھٹو زرداری کہتے ہیں کہ وہ ذوالفقار بھٹو کے نواسے ہیں، بینظیر بھٹو ساری عمر شریف برادران کے عتاب کا نشانہ رہیں، بلاول بھٹو زرداری کو یاد دلانا پڑتا ہے (ن) لیگ نے آپ کی والدہ پر کیا ستم نہیں ڈھائے۔ آپ نے سندھ کو تباہ کر دیا، سندھ میں بارش سے پورا کراچی سوئمنگ پول بن جاتا ہے، کراچی پانی سے بھر گیا، بلاول وزیراعلیٰ پنجاب کیلئے نیوز کانفرنس کر رہے ہیں۔

فواد چوہدری نے پنجاب کابینہ کی حلف برداری پر کہا کہ حمزہ ووٹ سےنہیں سپریم کورٹ کے فیصلے سے وزیراعلیٰ ہے، حمزہ شہباز ، جنہوں نے حلف لیا اور گورنر پنجاب توہین عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں، آپ میں تھوڑی شرم حیاء ہے تو سپریم کورٹ سے معافی مانگیں۔

شیریں مزاری نے کہا کہ مریم نواز بچوں کی طرح چیخ وپکار کر رہی ہیں، وہ عدلیہ پر حملے کررہی ہیں،شیریں مزاری نے کہا کہ یہ لوگ پاکستان کو ڈبو رہے ہیں ، تین ماہ میں پاکستان کا حشر نشر کیا گیا، ان کی بھارت کے ساتھ پرانی دوستیاں ہیں، وقت آگیا ہے پاکستان کے لیے سوچیں۔

Related Articles

Back to top button